0

روس میں دہشت کی علامت بننے والا خون خوار بھیڑیا مارا گیا

روس: روس میں ایک بہت خون خوار اور غیرمعمولی بڑی جسامت کا بھیڑیا ایک شکاری نے مارڈالا ہے جو ایک عرصے سے علاقے میں خوف کی وجہ بنا ہوا تھا۔یہ بھیڑیا برف سے ڈھکے پرامن دیہاتوں بالخصوص الیگزینڈر ووکا کے لوگوں میں دہشت کی علامت بنا ہوا تھا۔ یہ علاقہ جنوب مغربی روس کے ایک ضلع میں واقع ہے جہاں قبرستان کے اطراف میں یہ بھیڑیا اکثر دیکھا جاتا رہا اور اسی وجہ سے لوگوں میں خوف پایا گیا۔لوگوں کے ڈر کی وجہ سے یہ بھیڑیا مزید بے خوف ہوگیا اور اس نے جانوروں پر حملہ کرنا شروع کردیا۔ اس درندے نے مجموعی طور پر 200 گائے، کتوں، چھوٹے مویشیوں اور یہاں تک کہ گھوڑوں پر بھی حملہ کیا اور انہیں چیرپھاڑ کرکے مارڈالا۔اس کے بعد بعض دیہاتیوں نے اسے اپنی بندوق کا نشانہ بنانے کا سوچا اور اسے قبرستان میں تلاش کیا جہاں ہیبت ناک بھیڑیا دکھائی دیا اور اسے نشانہ بنایا گیا۔ اس کی ہلاکت پر علاقے نے سکھ کا سانس لیا ہے کیونکہ بڑے اور بچے اس کے خوف سے باہر نکل نہیں پارہے تھے۔ ایک ماہ میں یہ عفریت کئی جانوروں کو پچھاڑ چکا تھا۔مقامی شکاری آئیگور برانو نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ یہ سال ہمارے لیے مشکل رہا اور ہم بھیڑیوں سے مات کھاچکیہیں۔ پورے روس میں ایسے 30 ہزار سے زائد بھیڑیئے موجود ہیں لیکن وہ آبادیوں تک نہیں آتے اور ایک عرصے سے منظر سے غائب تھے تاہم اکثر یہ گاں اور کچی آبادیوں میں نکل آتے ہیں اور پالتو جانوروں کو نشانہ بناتے ہیںدوسری جانب اداکاروہدایتکارواسع چوہدری نے ٹوئٹ کیا کہ اب لندن کیا، کہیں بھی نہیں جاں گا جس پرہمایوں سعید نے جواب دیا کہ وہ کراچی پہنچ چکے ہیں لیکن وہ گھرنہیں جائیں گے، کیونکہ وہ اورعدنان صدیقی خود کوایک کمرے میں بند کررہے ہیں۔ اللہ ہم سب کو اپنے حفظ و امان میں رکھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں