0

کورونا وائرس نے ہالی ووڈ کی رونقیں اجاڑ دیں، اربوں ڈالرز ڈوبنے کا خطرہ


دنیا بھر میں کوروناوائرس نے کسی عفریت کی طرح پنجے پھیلالیے ہیں لوگ کورونا کی دہشت سے اپنے گھروں میں سہمے بیٹھے ہیں ہر چہرے سے خوف جھلک رہا ہے، گلیاں سڑکیں سنسان پڑی ہیں۔ اس جان لیو ااور مہلک وائرس نے اب تک 13 ہزار سے زائد زندگیاں نگل لی ہیں جب کہ لاکھوں لوگ اس سے متاثر ہیں۔کورونا وائرس نے جہاں عالمی معیشت پر بہت برے اثرات مرتب کیے ہیں وہیں اس نے دنیا کی سب سے بڑی انٹرٹینمنٹ کی انڈسٹری یعنی ہالی ووڈکو بھی ویران کردیا ہے۔ اربوں کھربوں کے بجٹ سے بننے والی ہالی ووڈ کی تقریبا تمام زیر تکمیل فلموں کی شوٹنگ بند ہوگئی ہیں۔ جب کہ سینما اور تھیٹرز میں ویرانی چھائی ہوئی ہے۔یو ایس انٹرٹینمنٹ انڈسٹری یونین آئی اے ٹی ایس ای (انٹرنیشنل الائنس آف تھیٹریکل اسٹیج ایمپلائیز) کے مطابق کورونا وائرس کے باعث ہونے والے حالیہ شٹ ڈان کی وجہ سے ہالی ووڈ کے تقریبا ایک لاکھ 20 ہزارلوگ بے روز گار ہوگئے ہیں۔ صرف یہی نہیں انٹرٹینمنٹ کے شعبے سے جڑے کئی بڑے اور مہنگے ترین ایونٹس بھی کورونا وائرس کے باعث منسوخ کردئیے گئے ہیں۔ دی ہالی ووڈ رپورٹر کے مطابق کورونا وائرس سے متعلق فیصلوں کے اثرات کی وجہ سے رواں سال ہالی ووڈ کو 20 بلین ڈالرز کا نقصان ہونے کا اندیشہ ہے۔میٹ گالافیشن کی دنیا کے سب سے بڑے میلے میٹ گالا کو بھی کورونا وائرس کے باعث منسوخ کردیا گیا ہے۔ میٹ گالا کی تقریب رواں سال 4 مئی کو منعقد کی جانی تھی لیکن حالیہ صورتحال کے باعث انتظامیہ نے اس تقریب کو ملتوی کرنا ہی مناسب سمجھا۔ دی میٹروپولیٹن میوزیم آف آرٹس کی جانب سے میٹ گالا کو منسوخ کیے جانے کے اعلان کے بعد تقریب کے انعقاد کی نئی تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں