Get Adobe Flash player

مقبوضہ کشمیر ،بھارتی تسلط کیخلاف آج یوم سیاہ ،لندن میں اظہار یکجہتی کیلئے ملین مارچ،بلاول پر شر پسندوں کا ٹماٹر اور انڈوں سے حملہ

لندن میں کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ملین مارچ کیا جس میں پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری  آصفہ بھٹوزر داری بھی شریک ہوئے جبکہ مقررین نے کشمیریو ں کے حق خود ارادیت کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ برطانوی حکومت اس سلسلے میں کر دار ادا کرے ۔ چند شر پسندوں نے بلاول کی تقریر سے پہلے انڈے ، ٹماٹر ، پتھر اور بوتلیں پھینکیں۔لندن میں پاکستانیوں نے کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لئے ملین مارچ کیا جس میں پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زر داری اور آصفہ بھٹو زر داری  کے علاوہ برطانوی پارلیمنٹ کے اراکین اور مختلف جھوٹی بڑی سیاسی جماعتوں کے نمائندے بھی شریک ہوئے۔ برطانوی پارلیمنٹ کے اراکین اور دیگر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کشمیریوں کے حق خود ارادیت کا مطالبہ کیا۔ مظاہرین نے بھارتی فوج کے کشمیر سے اخراج اور کشمیریوں کے حقوق کے خلاف احتجاج کیا اور مطالبہ کیا کہ برطانوی حکومت اس سلسلے میں اپنا کردار ادا کرے۔ بعد ازاں لارڈ نذیر احمد کی سربراہی میں وفد نے برطانوی وزیراعظم کی رہائشگاہ 10 ڈائوننگ سٹریٹ میں کشمیریوں کے حوالے سے مفاہمت کی ایک یادداشت پیش کی لارڈ نذیر احمد نے کہاکہ ہزاروں کی تعداد میں لوگ کشمیری عوام اور ان کے حقوق کی آزادی کیلئے لندن میں اکھٹے ہوئے تھے  لندن میں کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے حق کیلئے اس سے بڑا اجتماع آج سے پہلے کبھی نہیں ہوا تھاخطاب کرتے ہوئے بیرسٹر سلطان محمود نے کہاکہ کشمیرکی آزادی کو کوئی طاقت نہیں روک سکتی اطلاعات کے مطابق بھارتی شرپسندوں نے کشمیریوں کے حق خود ارادیت کیلئے ملین مارچ کو سبوتا ژکرنے کی کوشش کی اور سٹیج پر بوتلیں پھینکیں ہنگامہ آرائی پر برطانوی پولیس نے سٹیج کا کنٹرول سنبھال لیا نجی ٹی وی کے مطابق ہنگامہ آرائی کے دور ان بلاول بھٹو زر داری تقریر کئے بغیر چلے گئے تاہم بلاول بھٹو زر داری کی بہن آصف بھٹو زر داری نے کہاکہ بلاول بھٹو زر داری نے تقریر کی اور پھر واپس گئے اور بلاول بھٹو زر داری خیریت سے ہیں انہوںنے کہاکہ بھارتی ایجنٹوں نے بلاول بھٹو زر داری کو تقریر کر نے سے روکنے کی کوشش کی انہوںنے اس موقع پر ''ہمارانعرہ سب سے بھاری  رائے شماری  رائے شماری ''لواں گے  لواں گے پورا کشمیر لواں گے کے نعرے لگائے ۔، حکومت آزادکشمیر اور حریت کانفرنس کی مشترکہ کال پر مقبوضہ کشمیر میں بلا جوازفوج کشی کے خلاف ریاست جموں وکشمیر کے دونوں اطراف،گلگت بلتستان ،پاکستان کے چاروں صوبوں اور دنیا بھرمیں آج بروز سوموار27اکتوبر کو بھارت کے خلاف بھرپور انداز میں کشمیری عوام یوم سیاہ منائیں گے اس روز کاروباری مراکز بند اور مکمل طور پر پہیہ جام ہڑتال ہو گی جلسے جلوس ،ریلیاں ،احتجاجی مظاہرے کیئے جائیں گے ریلیوں کے شرکاء بھارتی سفارتخانوں اوراقوام متحد ہ کے مشن دفاتر جا کر 27اکتوبر 1947کو بھارت کی طرف سے مقبوضہ کشمیرمیں فوج کشی کے ذریعے جابرانہ تسلط قائم کرنے اوربدترین ریاستی دہشت گردی ،انسانی و شہری حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں ،ورکنگ بائونڈری اور لائن آف کنٹرول پر عسکری جارحیت سے پیدا ہونے والی کشیدہ صورتحال درجنوں نہتے شہریوں کے قتل عام کے خلاف احتجاجی یاداشت پیش کریں گے ،گزشتہ روز الیکٹرانک پرنٹ میڈیا کے نمائندوں کے ہمراہ یوم سیاہ کے تاریخ ساز جلسہ عام کی تیاریوں اور انتظامات کا جائزہ لینے کے بعد ڈسٹرکٹ کمپلیکس کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان پیپلز پارٹی آزادکشمیر کے میڈیا ایڈوائزر شوکت جاوید میر نے کہا کہ بھارت جنگی جنون اور توسیع پسندانہ جیسے مکروہ عزائم کی تکمیل کیلئے حالیہ ایام میں اربوں کھربوں روپے کے دفاعی سازو سامان کی خریداری کس مقصد کیلئے کر رہا ہے