Get Adobe Flash player

کرپشن کے برے اثرات سے آگاہی، نیب کا اعلیٰ تعلیمی کمیشن سے تعاون کا معاہدہ

پاکستان کے نوجوانوں کے درمیان بدعنوانی کے برے اثرات کے خلاف آگاہی کے لئے نیب نے اعلیٰ تعلیمی کمیشن کے تعاون سے مفاہمت کی ایک یاداشت پر دستخط کئے ہیں تاکہ معاشرے سے بدعنوانی کے خاتمہ کے لئے مشترکہ کوششیں کی جائیں۔ اس سلسلے میں اعلیٰ تعلیمی کمیشن آفس ایچ نائن اسلام آباد میں ایک تقریب ہوئی۔ نیب کے اعزازی ڈپٹی چیئرمین ریئر ایڈمرل (ر) سعید احمد سرگانہ اور چیئرمین ایچ ای سی ڈاکٹر مختار احمد نے مفاہمت کی یاداشت پر دستخط کئے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نیب کے ڈپٹی چیئرمین ریئر ایڈمرل (ر)  سعید احمد سرگانہ نے کہا کہ  قومی احتساب بیورو کو قومی احتساب آرڈیننس 1999ء کی دفعہ 33 سی کے تحت ایک ریاستی ذمہ داری سونپی گئی ہے تاکہ بدعنوانی اور کرپشن کے خاتمہ، اس سلسلے میں میڈیامہم یا تعلیمی پروگراموں کے انعقاد، بدعنوانی کے نقصان دہ اثرات سے متعلق حکام، سرکاری عہدیداروں اور کمیونٹی کی سطح پر لوگوں میں شعور بیدار کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ آج والدین اپنے بچوں کے گریڈ اور پوزیشنوں پر زور دیتے ہیں تاہم وہ اس بات کو یکسر فراموش کر دیتے ہیں کہ انہیں کردار سازی پر زور دینا چاہئے۔ نیب کو مستقبل کی قیادت بالخصوص طلبہ سے بڑی توقعات ہیں۔ اس سلسلے میں نیب نے 2012ء میں اقدامات اٹھائے اور اسکول، کالج، یونیورسٹیوں، یونین کونسلوں اور ضلعی سطح پر کردار سازی کو فروغ دینے کا آغاز کیا۔ اب تک ملک بھر میں 19193 کردار ساز سوسائٹیاں تشکیل دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نیب ملک میں بدعنوانی کے خاتمے کا قانونی اختیار رکھتا ہے اس لئے ادارہ نے اعلیٰ تعلیمی کمیشن کے ساتھ ٹھوس شراکت داری کے قیام کا تہیہ کر رکھا ہے تاکہ نوجوانوں میں بدعنوانی کے برے اثرات کا شعور ہو۔ نیب اور اعلیٰ تعلیمی کمیشن انسداد بدعنوانی کے موضوعات پر گریجوایٹ اور پوسٹ گریجوایٹ طلبہ کیلئے نصاب تیار کریں گے اور مشترکہ طور پر سیمیناروں، واکس، کانفرنسز، ورکشاپس کا اہتمام کریں گے۔ ایچ ای سی اور کردار ساز سوسائٹیوں کے زیر اہتمام یونیورسٹیوں کی سطح پر طلبہ کے درمیان مضمون نویسی، مشاعرہ، ڈیٹا بیس، تقریری مقابلوں، مصوری، پوسٹر مقابلوں اور پرفارمنگ آرٹ جیسے مقابلوں کا انعقاد ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ توقع ہے کہ اعلیٰ تعلیمی کمیشن کے ساتھ تعاون سے کرپشن کے برے اثرات کے خلاف شعور بیدار ہوگا۔ اس موقع پر اعلیٰ تعلیمی کمیشن کے چیئرمین ڈاکٹر مختار احمد نے خطاب کرتے ہوئے نیب کے تعاون کا خیرمقدم کیا تاکہ نوجوانوں اور پاکستان کی یونیورسٹیوں کے طلبہ کے درمیان شعور بیدار کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ایچ ای سی اینٹی کرپشن موضوعات پر سیمیناروں، کانفرنسوں، واکس اور دیگر سماجی سرگرمیوں کا اہتمام کرے گا۔