دین کی محنت چھوڑنے سے مسلمان رسوائی کی پستیوں میں چلا گیا،امت محمدیہ کو بھولا سبق یاد کرانا ہوگا،مولانا طارق جمیل

عالمی اجتماع کی مختلف نشستوں سے خطاب کرتے ہوئے علماء اکرام نے کہا ہے کہ عبادت سے جنت ملتی ہے اور خدمت سے خدا، جنت کے نمونے دنیا میں مختلف پھلوں کی شکل میں موجود ہیں ،خدمت میں مشقت ہے ،اپنا کام اپنے ہاتھ سے کرنا سنت ہے ،عاجزی کیساتھ زندگی گزرانی ہے ،اللہ رب العزت اپنے بندوں کو ستر مائوں سے زیادہ پیار کرتا ہے وہ اپنے بندوں کی ہر پکار سنتا ہے ،رات کی تاریکیوں میں اٹھ اٹھ کر رب کی خوشنودی اور قرب حاصل کرنا ہوگا ،اپنے گناہوں کی معافی مانگنا ہوگی ،دین کی محنت اور عظمت کیلئے اپنا مال وقت اور جان لگانی ہوگی ۔ اجتماع میں شرکاء کی تعداد 8لاکھ سے تجاوز کرگئی ،تبلیغی اجتماع کی مختلف نشستوں سے خطاب کرتے ہوئے مولاناسعد ،مولانا ذوہیر ،مولانا طارق جمیل نے کہا کہ دین کی محنت چھوڑنے سے مسلمان ذلت ورسوائی کی پستیوں میں چلا گیا ،امت محمد یہ ۖ کو بھولا ہوا سبق یاد کروانا ہے نبی اکرم ۖ نے محنت کرکے جس طرح صحابہ اکرام کی جماعتیں تیار کیں جنہوں نے دین کی تبلیغ اور دعوت کو پوری دنیا میں پھیلا کر اپنا حق ادا کیا آج خرافات اور مشکلات میں گھر ی امت کو دوبارہ اسکے اصل مقام پر پہنچانے کیلئے ہر امتی کو داعی بننا ہو گا دعوت کے عظیم کام کی سرانجام دہی کیلئے بار بار اسکا ذکر اور فکر کرنا ہے امت کو جنت میں لیجانے اور جہنم سے بچانے کی تگ دو کرنا ہے اپنے ملازمین ،ماتحتوں ،اہل وعیال کو دین سیکھانا ہے نماز کیا ہے ،روزہ ،حج ،زکوة کے فرائض سمجھانا ہونگے دین کی دعوت کو کھڑا کرنے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں ہر شخص داعی بن جائے تاجر تجارت سنت کے مطابق کرے