یمن کے وزیردفاع اور انٹیلی جنس چیف القاعدہ کے قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے

 کے بعد سیکیورٹی فورسز نے ملزمان کی تلاش کے لئے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کردیا ہے۔ القاعدہ کی جانب سے تازہ کارروائی سے قبل وزارت دفاع کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہ صوبہ شبوا میں شرپسندوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی جبکہ اسی صوبے میں 29 اپریل سے امریکی ڈرون طیاروں کے تواتر سے حملے جاری ہیں جس میں القاعدہ کے متعدد ارکان ہلاک ہوچکے ہیں۔