Get Adobe Flash player

کابل کے علاوہ افغانستان سے سی آئی اے آپریشن معطل کیے جانے کا منصوبہ

ایک امریکی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ افغانستان سے امریکی فوج کے انخلاء کے سی آئی اے کے منصوبے نے فوج سے تعلقات میں کشیدگی پیدا کردی،امریکی اخبار نے ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ افغانستان میں سیٹلائٹ اڈوں کو بند کرنے اور اور عملہ کو کابل واپس لے جانے کے سی آئی اے کی منصوبہ بندی سے امریکی فوجی فکر مند ہے۔اخبار کا کہنا ہے کہ فوج کو خدشہ ہے کہ سی آئی اے کے اس منصوبے پر عملدرآمد سے انٹیلی جنس کے اہم ذریعہ سے محروم ہوسکتے ہیں۔سی آئی اے کے ڈائریکٹر جان برنن نے مارچ میں ملٹری کمانڈروں کو بتایا تھا کہ ایجنسی کابل کے باہر اپنے اڈوں کو بند کر رہی ہے۔اس کے ساتھ ساتھ سی آئی اے کے کیس کے افسران اور تجزیہ کاروں اورنیشنل سیکورٹی ایجنسی کے ماہرین کو بھی ہٹارہی ہے۔اخبار کا کہنا ہے کہ یہ انخلاء ایسے وقت میں ہورہا ہے جب طالبان موسم بہار میں ایک مرتبہ پھر کارروائی کے لئے تیار ہیں جس کی وجہ سے سی ائی اے اور میدان جنگ میں موجود امریکی فوجی کمانڈروں کے درمیان تعلقات کشیدگی کا شکار ہیں۔