Get Adobe Flash player

شام کے لئے عالمی ایلچی الاخضر الابراہیمی مستعفی

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے بھی تصدیق کر دی۔ الاخضر الابراہیمی 31 مئی کو اپنی ذمہ داریوں سے سبکدوش ہو جائیں گے۔اقوام متحدہ اور عرب لیگ کے شام کے لئے مشترکہ ایلچی الاخضر الابراہیمی نے مستعفی ہونے کا اعلان کر دیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے اپنے ایک بیان میں الاخضر الابراہیمی کے استعفے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ 31 مئی کو اپنی ذمہ داریوں سے سبکدوش ہو جائیں گے۔ الاخضر ابراہیمی کو دو سال قبل اقوام متحدہ کے سابق سیکرٹری جنرل کوفی عنان کی جگہ شام کے لئے خصوصی عالمی ایلچی مقرر کیا گیا تھا۔ تب انھوں نے کہا تھا کہ یہ ایک نہایت پیچیدہ اور مشکل مشن ہوگا۔ وہ اپنی سفارتی کوششوں کے نتیجے میں شام میں جاری بحران کے حل کے لئے اسد حکومت اور حزب اختلاف کو مذاکرات کی میز پر لانے میں کامیاب رہے تھے۔ یہ اور بات ہے کہ فریقین کے درمیان جنیوا میں مذاکرات کے دو ادوار میں تنازع کے حل لئے کوئی سجھوتا نہیں طے پا سکا تھا۔ البتہ جنیوا میں فروری میں منعقدہ مذاکرات کے آخری دور میں شامی حزب اختلاف اور حکومت کے درمیان مذاکرات میں انھیں واحد کامیابی یہ ملی تھی کہ فریقین نے وسطی شہر حمص میں ایک ہفتے کے لئے جنگ بندی سے اتفاق کیا تھا اور اس دوران وہاں پھنسے ہوئے ہزاروں شہروں کو دوسرے علاقوں میں منتقل کیا گیا تھا۔