شمالی کوریا نے پھر امریکی دبائو اور عالمی پابندیوں کو مسترد کردیا

 شمالی کوریا نے ایک مرتبہ پھر  امریکی دبائو اور عالمی پابندیوں کو  مسترد کرتے ہوئے کم فاصلے تک مار کرنے والے مزید 3 بیلسٹک میزائل کا  کامیاب تجربہ کرنے کا دعوی کر دیا،تاہم امریکی حکومت کا کہنا ہے کہ حالیہ داغے جانے والے میزائل گوام یا امریکہ کے لیے خطرہ نہیں ہے۔۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی فوج نے کہا ہے کہ شمالی کوریا نے تین کم درجے تک مار کرنے والے بیلسٹک میزائل داغے ہیں۔شمالی کوریا کی جانب سے تجربات ایک ایسے وقت میں سامنے آئے ہیں، جب امریکا اور جنوبی کوریا جزیرہ نما کوریا کے مغربی حصے میں مشترکہ فوجی مشقوں میں مصروف ہیں، جنہیں شمالی کوریا اپنے خلاف اشتعال انگیزی تصور کرتا ہے۔کوریا ڈیفنس نیٹ ورک کے تجزیہ نگار لی اِل وو کا کہنا ہے کہ پیانگ یونگ کی جانب سے کیا جانے والا یہ تجربہ جنوبی کوریا اور امریکا کے لیے ایک کم درجے کا خطرہ ہے۔بحر الکاہل میں موجود امریکی سینٹرل کمانڈ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا کی جانب سے داغے گئے 3 میزائلوں میں سے 2 میزائل کچھ دیر ہوا میں پرواز کرنے کے بعد ناکارہ ہوگئے تھے جبکہ تیسرا میزائل داغے جانے کے فورا بعد ہی ناکارہ ہوگیا تھا۔