افغان فوجی امریکی ہتھیار طالبان کو فروخت کر دیتے ہیں, ہیلی کاپٹر بھی بیچا گیا: رپورٹ

نجی خبررساں ادارینے دعوی کیا ہے کہ طالبان کی جانب سے امریکی ہتھیار حاصل کرنے کے صرف چند ایک ہی طریقے ہیں ،ایک طریقہ تو یہ ہے کہ طالبان جنگجو بعض اوقات افغان پولیس اور فوجی اہلکاروں کے خلاف حملوں میں کامیابی کے وقت ہتھیار چھین لیتے ہیں لیکن ایک طریقہ یہ بھی ہے جو بقول امریکی اور افغان حکام کے سامنے آیا ، وہ یہ کہ طالبان افغان سیکیورٹی فورسز کے بدعنوان عناصر سے ہتھیار خرید لیتے ہیں۔ افغان آرمی کے کرنل جنہوں نے اپنا نام احمد زئی ظاہر کیا ، انکا کہنا ہے کہ مختلف چیک پوسٹوں پر تعینات افغان فوجیوں نے اپنا سارا اسلحہ و ہتھیار فروخت کر دیئے، یہ ہتھیار جنگجووں کو بیچے گئے ۔رپورٹ کے مطابق طالبان کمانڈرز کا کہنا ہے کہ امریکی ہتھیاروں کی فروخت کیلئے بلیک مارکیٹ موجود ہے ،اس بلیک مارکیٹ سے ایران کے ڈیلرز بھی منسلک ہیں۔ کرنل احمد زئی کے مطابق ایک افغانی پائلٹ جو پاکستان کے بارڈر پر اپنا روسی ہیلی کاپٹر اڑا رہا تھا، اس نے وہ ہیلی کاپٹربھی فروخت کر ڈالا۔ خبررساں ادارینے دعوی کیا ہے کہ طالبان کی جانب سے امریکی ہتھیار حاصل کرنے کے صرف چند ایک ہی طریقے ہیں،ایک طریقہ تو یہ ہے کہ طالبان جنگجو بعض اوقات افغان پولیس اور فوجی اہلکاروں کے خلاف حملوں میں کامیابی کے وقت ہتھیار چھین لیتے ہیں لیکن ایک طریقہ یہ بھی ہے جو بقول امریکی اور افغان حکام کے سامنے آیا ، وہ یہ کہ طالبان افغان سیکیورٹی فورسز کے بدعنوان عناصر سے ہتھیار خرید لیتے ہیں۔ افغان آرمی کے کرنل جنہوں نے اپنا نام احمد زئی ظاہر کیا ، انکا کہنا ہے کہ مختلف چیک پوسٹوں پر تعینات افغان فوجیوں نے اپنا سارا اسلحہ و ہتھیار فروخت کر دیئے، یہ ہتھیار جنگجووں کو بیچے گئے ۔رپورٹ کے مطابق طالبان کمانڈرز کا کہنا ہے کہ امریکی ہتھیاروں کی فروخت کیلئے بلیک مارکیٹ موجود ہے ،اس بلیک مارکیٹ سے ایران کے ڈیلرز بھی منسلک ہیں۔ کرنل احمد زئی کے مطابق ایک افغانی پائلٹ جو پاکستان کے بارڈر پر اپنا روسی ہیلی کاپٹر اڑا رہا تھا، اس نے وہ ہیلی کاپٹربھی فروخت کر ڈالا۔