ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھ کر بہتر کام کروں گا، ہیڈکوچ وقار یونس

پاکستان کرکٹ ٹیم کے نئے ہیڈ کوچ وقار یونس نے کہا ہے کہ وہ سسٹم سے کوچ بن کر آئے ہیں کوئی غلط کام نہیں کیا۔اگر کوئی تنقید کرے تو سامنا کرنے کے لئے بھی تیار ہیں۔نجی ٹی وی سے گفتگو میں کہاکہ وہ سسٹم کے تحت درخواست دے کر کوچ بنے ہیں۔کوئی غلط کام نہیں کیا۔سابق فاسٹ بولر کا کہنا تھاکہ وہ صاف دل کے ساتھ ٹیم کے لئے کچھ کرنا چاہتے ہیں کسی کھلاڑی سے کوئی شکایت نہیں۔ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھا ہے۔انہوں نے کہا کہ سپورٹ اسٹاف کے لئے پی سی بی کو مشورہ دیا ہے۔ورلڈ کپ سے قبل سری لنکا، نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے خلاف سیریز سے فائدہ ہوگا۔ وقاریونس کا کہنا تھا کہ شاہد آفریدی کے ساتھ کام کرنے میں کوئی مسئلہ نہیں ہوگا۔ ماضی کے بجائے پاکستان ٹیم کوفتوحات کی راہ پرگامزن کرنے پرتوجہ مرکوز کرنا چاہتے ہیں۔ وقاریونس بطورہیڈ کوچ آئندہ ماہ ٹیم کو جوائن کرینگے۔ ایک انٹرویو میں سابق کپتان کا کہنا تھا کہ ان کی پہلی ترجیح مضبوط ٹیم تشکیل دینا ہے ٹیم میں شامل تمام پلیئرز ان کیلئے نئے نہیں وہ ان کے ساتھ پہلے بھی کام کرچکے ہیں۔ یقین ہے کہ کھلاڑیوں اور بورڈ کے تعاون سے ٹیم کی خامیاں دور کرکے اسے مضبوط بنادیں گے۔