سمر کیمپ میں ٹریننگ،عمررسیدہ کرکٹرز شدید مشکلات سے دوچار

پاکستان کرکٹ ٹیم کے مستقبل کے ایونٹس کی تیاری کیلئے جاری سمر کیمپ میں سخت ترین ٹریننگ سے عمر رسیدہ کرکٹرزشدید مشکلات سے دوچار ہوگئے ، مصباح الحق تقریبا 40 سال کے ہوچکے، یونس خان، ذوالفقار بابر اور یاسر حمید بھی زندگی کی 36بہاریں دیکھ چکے، اعزاز چیمہ35 برس کے ہیں،کمسن ترین سمیع اسلم کی عمر 18سال اور 150دن ہے۔بیشتر کھلاڑی اکثر دوران تربیت مختلف حیلے بہانے بنانے لگے، کیمپ میں شریک کھلاڑیوں کا فٹنس لیول عالمی معیار کے مطابق نہ ہونے سے سلیکٹرز کوپریشانی لاحق ہے ۔کیمپ کمانڈنٹ اکیڈمی کے باولنگ کوچ محمد اکرم کی زیر نگرانی لاہور میں جاری ایک ماہ کا کنڈیشننگ کیمپ زور شور سے جاری ہے جس میں شریک انتالیس کھلاڑیوں کو دو گروپوں میں تقسیم کرکے کوچز فٹنس کی بحالی کیلئے کام کررہے ہیں۔ کھلاڑیوں کو صبح کے سیشن میں نیشنل اکیڈمی میں جم اور پول ٹریننگ جبکہ شام کے سیشن میں قذافی اسٹیڈیم میں رننگ کیلئے علاوہ جسمانی طور پر مضبوط بنانے کیلئے مشقیں کرائی جارہی ہیں تاکہ قومی کرکٹرز کو دنیائے کرکٹ کے دیگر ممالک کی طرح سپر فٹ بنایا جاسکے۔مصباح الحق رواں ماہ کی 28 تاریخ کو 40ویں سالگرہ منائیں گے، کیمپ کے نگران اور این سی اے ہیڈ کوچ محمد اکرم ٹیسٹ و ون ڈے کپتان سے 5دن چھوٹے ہیں،یونس خان، ذوالفقار بابر، یاسر حمید زندگی میں 36بہاریں دیکھ چکے،اعزاز چیمہ35،شاہد آفریدی،محمد حفیظ، عبدالرحمان 34،محمد سمیع، توفیق عمر 33، عمران فرحت،محمد عرفان،فیصل اقبال اور عاطف مقبول 32سال کے ہیں،عمر گل 30واں سال گزار رہے ہیں۔