Get Adobe Flash player

عہدہ چھوڑتے ہی رائے تبدیل ؛ شہریار نے غیر سیاسی پیٹرن انچیف کیلئے آواز اٹھا دی

چیئرمین کا عہدہ چھوڑنے کے بعد شہریارخان نے غیرسیاسی پی سی بی پیٹرن انچیف کیلیے آواز اٹھا دی۔شہریارخان نے 2014میں پی سی بی کی سربراہی سنبھالی اور اب تین سال مکمل ہونے پر سبکدوش ہو گئے، ان کا تقرر سابق وزیر اعظم نواز شریف کی جانب سے نجم سیٹھی کے ساتھ گورننگ بورڈ میں شمولیت کے بعد ہی ہوا تھا، مگر اب شہریارخان کی سوچ تبدیل ہو چکی، انھوں نے کہا کہ میری ذاتی رائے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کا پیٹرن ان چیف غیرسیاسی شخصیت کو ہونا چاہیے کیونکہ سیاسی لیڈر کا کچھ پتہ نہیں کہ وہ کس طرف رخ کر لیتے ہیں،وہ اپنے لوگوں کا تقرر کرتے ہیں جو کرکٹ کیلیے اچھا نہیں ہے۔یاد رہے کہ شہریارخان چیئرمین پی سی بی کی حیثیت سے 3 سالہ مدت مکمل ہونے کے بعد سبکدوش ہوگئے ہیں، 9 اگست کو نئے سربراہ کا انتخاب عمل میں آئے گا اور نجم سیٹھی کا انتخاب یقینی ہے۔ شہریارخان نے بی بی سی کو انٹرویو میں کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کے پیٹرن ان چیف پہلے صدر ہوا کرتے تھے بعد میں وزیراعظم نے یہ ذمہ داری سنبھال لی تاہم اس تبدیلی سے مجھے اپنے فرائض انجام دینے میں کوئی فرق نہیں پڑا۔ انھوں نے کہا کہ سابق وزیراعظم اور بورڈ کے پیٹرن ان چیف نواز شریف خود کرکٹ کے شوقین اور فرسٹ کلاس میچزکھیل چکے تھے،مگر ذاتی طور پر میں یہ سمجھتا ہوں کہ پیٹرن ان چیف کسی غیرسیاسی شخصیت کو ہی ہونا چاہیے۔