Get Adobe Flash player

ملک بھر کے اضلاع میں اسلامی بینکاری کی 2322 شاخیں فعال

 ملک بھر کے 112 اضلاع میں اسلامی بینکاری کی 2322 شاخیں فعال ہیں جبکہ اسلامی بینکاری انڈسٹری نے سٹیٹ بینک آف پاکستان کے سٹرٹیجک پلان 2014ـ18ئ  میں طے کردہ 2 ہزار شاخوں کا ہدف عبور کر لیا ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق اسلامی بینکاری صنعت نے ملک میں نمایاں پیشرفت کی ہے جبکہ سٹیٹ بینک کے پانچ سالہ سٹرٹیجک بینکاری کے اس شعبہ کا مارکیٹ میں 15 فیصد حصہ متوقع ہے۔اسلامی بینکاری کے فروغ کیلئے سٹیٹ بینک ضروری قانونی، ریگولیٹری اور نگرانی کے ڈھانچہ کے ساتھ ساتھ شعور کی بیداری اور استعداد کار میں اضافہ کے اقدامات کے ذریعے اپنا معاون کردار ادا کر رہا ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق اس وقت 5 مکمل طور پر اسلامی بینک اور 16 روایتی بینکوں سمیت 21 اسلامی بینکاری اداروں کی 112 اضلاع میں 2322 شاخوں کے نیٹ ورک کے ذریعے شریعت کی روشنی میں مصنوعات اور خدمات فراہم کی جا رہی ہیں۔نیشنل رورل سپورٹ پروگرام (این آر ایس پی) مائیکرو فنانس بینک نے بھی ایک خصوصی اسلامی مائیکرو فنانس ڈویڑن کے قیام سے اسلامی مائیکرو فنانس مصنوعات پیش کرنا شروع کر دی ہیں۔ کیلنڈر سال 2016ئ  کے دوران اسلامی بینکاری صنعت کی اثاثہ جاتی بنیاد 1.85 ٹریلین روپے رہی جو کہ 2015ئ  میں 1.6 ٹریلین روپے تھی جو اس شعبہ میں 15.1 فیصد اضافہ کو ظاہر کرتی ہے۔اسلامی بینکاری انڈسٹری کے ڈیپازٹس 2016ئ  میں 1.57 ٹریلین روپے تھے جبکہ یہ 2015ئ  میں 1.4 ٹریلین تھے، اس طرح ان میں 14.4 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا۔ مجموعی بینکاری نظام میں اثاثوں کے لحاظ سے اسلامی بینکاری کا حصہ کیلنڈر سال 2016ئ  میں بڑھ کر 11.7 فیصد رہا جو کیلنڈر سال 2011ئ  میں 7.8 فیصد تھا جبکہ کیلنڈر سال 2016ئ  میں اسلامی بینکاری کا ڈیپازٹ شیئر بڑھ کر 13.3 فیصد ہو گیا جو کیلنڈر سال 2011ئ  میں 8.4 فیصد تھا۔