Get Adobe Flash player

اسٹاک مارکیٹ ملکی تاریخ کی بدترین مندی کی لپیٹ میں رہی

پاکستان اسٹاک مارکیٹ گذشتہ ہفتے ملکی تاریخ کی بدترین مندی کی لپیٹ میں رہی اور کے ایس ای100انڈیکس4ہزار سے زائد پوائنٹس گھٹ گیا جس کے نتیجے میں کے ایس ای100انڈیکس 52600پوائنٹس کی ریکارڈ سطح سے گھٹ کر48500پوائنٹس کی انتہائی کم سطح پر بند ہوا ،اس مدت میں مارکیٹ کے سرمائے میں86کھرب سے زائدروپے کی کمی ریکارڈکی گئی جس سے سرمائے کامجموعی حجم10ہزار409ارب سے گھٹ کر96کھرب روپے پرآگیا۔ مارکیٹ میںکاروباری ہفتے کاآغازمندی کے ساتھ ہواورمسلسل مندی کایہ تسلسل پانچوں دن برقرار رہا جس کے سبب مارکیٹ شدید ترین مندی کی زد میں دیکھی گئی ۔ اسٹاک مارکیٹ ماہرین کے مطابق پانامہ کیس میں جے آٹی ٹی پر پیش رفت سے سیاسی افق پر چھائی بے یقینی کی صورتحال کے سبب اسٹاک مارکیٹ دبائو میں رہی ۔خصوصا غیر ملکی سرمایہ کاروں نے مارکیٹ میں نئی سرمایہ کاری سے نہ صرف ہاتھ کھینچ لیا ہے بلکہ سرمایہ بھی نکال لیا جس کے سبب مارکیٹ تیزی کیساتھ تنزلی کا شکار ہوئی فی الوقت مارکیٹ میں کوئی نیا ٹریگر نہ ہونے سے بھی مارکیٹ سرمایہ کارروں کی پرکشش نہیں ہے اسی وجہ سے انویسٹرز کی مارکیٹ میں عد م دلچسپی کا رجحان برقرار ہے ۔گذشتہ ہفتے کے ایس ای100انڈیکس میں 4081پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے کے ایس ای100انڈیکس52636.87پوائنٹس سے گھٹ کر48555.30پوائنٹس پر آگیا اسی طرح2571.01پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای30انڈیکس 25375.63پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 36130.33پوائنٹس سے کم ہو کر33693.59پوائنٹس پر بند ہوا ۔مندی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں86کھرب55ارب84کروڑ34لاکھ76ہزار770روپے کی کمی واقع ہوئی جس سے سرمائے کا مجموعی حجم 10ہزار409ارب61کروڑ31لاکھ40ہزار27روپے سے کم ہو رک96کھرب96ارب80کروڑ47لاکھ90ہزار797روپے رہ گیا ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میںگزشتہ ہفتے زیادہ سے زیادہ 43کروڑ17لاکھ73ہزارحصص کے سودے ہوئے اورٹریڈنگ ویلیو53ارب روپے ریکارڈکی گئی جبکہ کم سے کم کاروباری لین دین20کروڑ30لاکھ89ہزارحصص رہااورٹریڈنگ ویلیو15ارب روپے تک محدودرہی ۔گزشتہ ہفتے پاکستان اسٹاک مارکیٹ میںمجموعی طورپر1889کمپنیوںکاکاوبارہواجس میں سے483کمپنیوںکے حصص کی قیمتوںمیںاضافہ،1342میں کمی اور64کمپنیوںکے حصص کی قیمتوںمیںاستحکام رہا۔کاروباکے لحاظ سے آئل اینڈگیس ڈیولپمنٹ،اینگروکارپوریشن،کے الیکٹرک لمیٹڈ،یونائیٹڈبینک،فوجی سیمنٹ،پاورسیمنٹ،اینگروپولیمر،ٹی آرجی پاک لمیٹڈ،انٹراسٹیل لمیٹڈ،عائشہ اسٹیل مل،بینک آف پنجاب،کے الیکٹرون اواذگارڈنائن سرفہرست رہے۔