Get Adobe Flash player

پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) میں مندی کا رجحان رہا

پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) میں مندی کا رجحان رہا، کے ایس ای 100 انڈیکس 204.48 پوائنٹس کی کمی سے 49958.33 پوائنٹس پر بند ہوا، مارکیٹ سرمایہ میں 25 ارب 74 کروڑ 18 لاکھ 62 ہزار 522 روپے کی کمی رونماء ہوئی تاہم تجارتی حجم میں 47 کروڑ 16 لاکھ 92 ہزار 999 روپے کا اضافہ ہوگیا۔ اسی طرح خرید و فروخت میں بھی 3 کروڑ 62 لاکھ 86 ہزار 390 حصص کی تیزی رہی۔ تفصیلات کے مطابق کاروباری ہفتے کے چوتھے روز جمعرات کو پی ایس ایکس میں حصص کی فروخت کے دبائو اور مارکیٹ کریکشن کے باعث مندی کا رجحان رہا اورکے ایس ای 100 انڈیکس 204.48 پوائنٹس کی کمی سے 49958.33 پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ کے ایس ای 30 انڈیکس بھی 152.49 پوائنٹس کی مندی سے 26084.87 پوائنٹس پر بند ہوا۔ اسی طرح کے ایس سی آل شیئر انڈیکس میں 89.72 پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جبکہ کے ایم آئی 30 انڈیکس میں 307.25 پوائنٹس کی مندی رونماء ہوئی۔ مزیدبرآں بینکس ٹریڈ ایبل (بی اے ٹی آئی) انڈیکس 162.56 پوائنٹس کی کمی سے 19761.23 پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ آئل اینڈ گیس ٹریڈ ایبل (او جی ٹی آئی) انڈیکس 131.98 پوائنٹس کی مندی سے 17974.83 پوائنٹس پر بند ہوا۔ پی ایس ایکس - کے ایم آئی انڈیکس27.98 پوائنٹس کی کمی سے 24459.10 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مارکیٹ میں مجموعی طور پر 377 کمپنیوں کے حصص کا لین دین ہوا جن میں سے 146 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں ں تیزی، 217 کمپنیوں کے حصص کے بھائو میں مندی اور 14 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ سب سے زیادہ تیزی نیسلے پاکستان کے حصص کی قیمت میں ہوئی جس کے حصص کی قیمت 200 روپے کے اضافے سے 10200 روپے پر بند ہوئی۔ اسی طرح یونی لیور فوڈز کے حصص کی سودے بھی 50 روپے کی تیزی سے 6350 روپے پر بند ہوئے۔ سب سے زیادہ مندی سانوفیل ایونٹس اور ویتھ پاک لمیٹڈ ایکس ڈی کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی۔ سانوفیل ایونٹس کے حصص کی قیمت 86 روپے کی مندی سے 2000 روپے اور ویتھ پاک لمیٹڈ ایکس ڈی کے حصص کی قیمت بھی 51.83 روپے کی کمی سے 2284.50 روپے رہ گئی۔ سب سے زیادہ کاروبار بینک آف پنجاب (ر) کے حصص میں ہوا جو 2 کروڑ 59 لاکھ 59 ہزار 500 شیئرز رہا جس کی قیمت 1.19 روپے سے شروع ہو کر 1 روپے پر بند ہوئی جبکہ پاور سیمنٹ (ر) کے 2 کروڑ 55 لاکھ 73 ہزار حصص کے سودے 1.91 روپے سے شروع ہو کر 1.59 روپے پر بند ہوئے۔ مجموعی طور پر 26 کروڑ 87 لاکھ 94 ہزار 770 حصص کا کاروبار ہوا جس کا تجارتی حجم 11 ارب 79 کروڑ 52 لاکھ 1 ہزار 761 روپے رہا۔ مارکیٹ کیپیٹل 99 کھرب 59 ارب 60 کروڑ 64 لاکھ 67 ہزار 173 روپے سے کم ہو کر 99 کھرب 33 ارب 86 کروڑ 46 لاکھ 4 ہزار 651 روپے رہ گیا۔ فیوچر ٹریڈنگ میں 102 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں تیزی، 21 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں مندی اور 1 کمپنی کے حصص کی قیمت میں استحکام رہا جبکہ 2 کروڑ 70 لاکھ 36 ہزار 457 ہزار حصص کا کاروبار ہوا۔