تاریخ میں پہلی بار تجارتی خسارہ 30ارب ڈالر تک پہنچ گیا

سی پیک سے جڑے منصوبوں کے باعث درآمدات میں اضافہ ، تاریخ میں پہلی بار تجارتی خسارہ 30 ارب ڈالر تک پہنچ گیا۔رواں مالی سال کے 11 ماہ میں تجارتی خسارہ تاریخ میں پہلی بار 42 فیصد اضافے سے 30 ارب ڈالر تک پہنچ گیا ، جولائی سے مئی کے دوران ملکی درآمدات 20 فیصد اضافے سے 48 ارب 54 کروڑ ڈالر جبکہ برآمدات 3 فیصد کمی سے 18 ارب 54 کروڑ ڈالر تک محدود رہی۔معاشی تجزیہ کاروں کے مطابق پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کے باعث ملک میں مشینوں اور پاور جنریٹرز کی درآمدات دھڑا دھڑ جاری ہے ، جبکہ حکومت کی جانب سے ٹیکسٹائل پیکیج اور دیگر کئی مراعات دیے جانے کے باوجود برآمدات میں اضافے نہیں ہورہا ، ایکسپورٹرز اس کی بڑی وجہ مسلسل بڑھتی ہوئی پیداواری لاگت بتا رہے ہیں جس کے باعث پاکستان مصنوعات دیگر ممالک سے مسابقت نہیں کرپارہی۔