Get Adobe Flash player

پاکستان میں روئی کی قیمتوں میں زبردست تیزی

پنجاب کے کاٹن زونز میں ہونے والی غیر متوقع بارشوں کے باعث کپاس کی نئی فصل کی آمد میں 3سے 4ہفتوں کی متوقع تاخیر اور ڈالر کے مقابلے میں بھارتی روپے کی قدر میں اضافے کے باعث بھارتی کاٹن ایکسپورٹس رجحان میں کمی سامنے آنے سے پاکستان میں روئی کی قیمتوں میں زبردست تیزی جبکہ ممبر پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن (پی سی جی اے ) احسان الحق نے بتایا کہ گزشتہ دو ہفتوں کے دوران پنجاب کے کاٹن زونز بہاولنگر ،بہاولپور ،ملتان ،ساہیوال ،پاک پتن،فیصل آباد اور خانیوال میں غیر متوقع بارشوں کے باعث کپاس کی کاشت میں تاخیر اور پہلے سے کاشت کی گئی کپاس کی فصل کو نقصان پہنچنے کے باعث کپاس کی نئی فصل میں تقریباً 4ہفتوں کی تاخیر متوقع ہے۔ جبکہ قبل ازیں فروری /مارچ کے مہینوں میں درجہ حرارت روایت سے کم ہونے کے باعث ان مہینوں کے دوران ان کاٹن زونز میں کپاس کی کاشت بھی کم ہوئی تھی جبکہ رواں ہفتے کے دور ان سندھ کے کاٹن زونز میں بھی بارشیں ہونے کی پیشگوئی کی گئی ہے جس کے صحیح ہونے کی صورت میں رواں ہفتے کے دوران پاکستان میں روئی کی قیمتوں میں مزید تیزی کا رجحان سامنے آسکتا ہے۔انہوں نے بتایا کہ کپاس کی نئی فصل کی آمد میں تاخیر کی اطلاعات کے باعث ٹیکسٹائل ملز مالکان نے بھی معیاری روئی کی خرید میں بھی اضافہ کر دیا ہے اور اطلاعات کے مطابق اس وقت ملک بھر میں معیاری روئی کے 2لاکھ بیلز سے بھی کم کے ذخائر بتائے جا رہے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ گزشتہ ہفتے کے دوران پاکستان میں روئی کی قیمتیں تقریباً 200من فی اضافے کے ساتھ 7ہزار روپے فی من تک پہنچ گئیں جبکہ نیویارک کاٹن ایکسچینج میں حاضر ڈلیوری روئی کے سودے 1.55سینٹ فی پائونڈ کمی کے بعد 92.55سینٹ جبکہ جولائی ڈلیوری روئی کے سودے .54سینٹ فی پائونڈ کمی کے بعد پچھلے تین ہفتوں کی کم ترین سطح 89.82سینٹ فی پائونڈ تک گر گئے۔بھارت میں روئی کی قیمتیں 576روپے فی کینڈی کمی کے بعد 41ہزار 972روپے فی کینڈی، چین میں 875یو آن فی ٹن کمی کے بعد 16ہزار 385یو ا?ن فی ٹن جبکہ کراچی کاٹن ایسوسی ایشن میں روئی کے اسپاٹ ریٹ 100روپے فی من اضافے کے ساتھ 6ہزار 800روپے فی من تک پہنچ گئے۔