Get Adobe Flash player

آئندہ مالی سال کے بجٹ میں ٹیکس ریلیف ملنے کے امکانات کم

آئندہ مالی سال کے بجٹ میں ٹیکس ریلیف ملنے کے امکانات کم ہیں۔ٹیکسٹائل ، لیدر سمیت دیگر اشیا کی مقامی فروخت پر حکومت17 فیصد جی ایس ٹی عائد کرنے کی تیاری کر رہی ہے۔اسلام آباد میں وزارت خزانہ اور فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے ذرائع کے مطابق نئے بجٹ میں 200 ارب روپے کے اضافی ٹیکس لگانے پر غور کیا جا رہا ہے۔ یہ آمدنی، ٹیکس کی چھوٹ محدود کرکے حاصل کی جاسکتی ہے۔ اس کے علاوہ برآمدت کے فروغ کے لیے ٹیکسٹائل ، قالین سازی ، لیدر ، سرجیکل آلات اور کھیلوں کے سامان پر دی گئی ٹیکس چھوٹ کو زیرو ریٹڈ ہی رکھا جائے گا لیکن ان سیکٹرز کی مصنوعات کی مقامی فروخت پر 17فیصد سیلز ٹیکس عائد ہوسکتا ہے۔حکومت کی جانب سے بجٹ 15-2014 میں ا سٹیشنری کی بعض مصنوعات پر ٹیکس چھوٹ ختم کرنے کا بھی امکان ہے۔