کرپٹ افسران کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائیگی،آفتا ب احمد چیمہ

انسپکٹر جنرل آف پولیس اسلام آبادآفتاب احمد چیمہ نے کہا کہ جو بھی پولیس افسر کرپشن و بدعنوانی اور جرائم پیشہ عناصر کے ساتھ مراسم رکھنے میں ملوث پایا گیا اورجو محکمہ کی بدنامی کا باعث بنے گا ایسے پولیس افسر کو کسی صورت بھی معاف نہیں کیا جائے گا اور اس کے خلاف سخت محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔ یہ احکا ما ت آئی جی اسلام آ باد نے انسپکٹر فیا ض تنو لی کو جبر ی ریٹا ئرکر نے کے موقع پر کیں ،تفصیلات کے مطابق انسپکٹر جنر ل آف پولیس اسلام آباد کو شکا یا ت مو صول ہو ئیں تھیں کہ انسپکٹر فیا ض تنو لی کہ منشیا ت فروشوں کے سا تھ تعلقات، غیر اخلا قی حر کا ت ، اختیا ر ات کا نا جا ئز استعما ل اور جر ائم پیشہ عنا صر کی پشت پنا ہی میں ملو ث ہے اس کے علا وہ دیگر الزاما ت لگا ئے گئے ہیں ۔ جس بنا ء پر آئی جی اسلام آ باد کی طر ف سے شوکا ز نو ٹس جا ری کیا گیا تھا ۔ ان تمام الزامات کے پیش نظر اس کو معطل کیا گیا تھا اور اس کے خلاف مختلف افسران کے پاس انکوائریاں ہو رہی تھیں ۔تمام انکوائری افسران نے مذکورہ انسپکٹر کو قصور وار ٹھہرایا اور اس کو بڑی سز ا کی سفارش کی ۔جس پر گزشتہ روز آئی جی پی اسلام آباد نے مذکورہ انسپکٹر کو اپنے دفتر بلا کر اس پر لگائے گئے الزامات کے بارے میں پوچھ گچھ کی گئی جن کے بارے میں وہ کوئی تسلی بخش جواب نہ دے سکا ۔جس پر آئی جی اسلام آباد نے مذکورہ انسپکٹر کو جرائم پیشہ عناصر،منشیات اور شراب فروشوں کے ساتھ بالواسطہ رابط رکھنے اور اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے،ڈانسنگ لڑکیوں کے ساتھ قابل اعتراض تصاویر بنوانے اور محکمہ کے وقار کو خراب کرنے پر اس کو محکمہ سے جبری ریٹائرمنٹ کر دیا ۔اس موقع پر انسپکٹر جنرل آف پولیس اسلام آباد آفتاب احمد چیمہ نے تمام افسران کو سختی سے ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ کرپشن و بدعنوانی اور محکمہ کا وقار خراب کرنے والوں کو محکمہ میں کسی صور ت برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ایسے افسران و ملازمان جو کسی بھی جرائم پیشہ عناصر کے ساتھ روابط میں ملوث پائے گئے ان کے خلاف سخت محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔