Get Adobe Flash player

عمران پر جھوٹے الزام پر تمام لیگی حکومتی ارکان کو عزت یاد آگئی، شیری مزاری

تحریک انصاف کی رکن قومی اسمبلی شیریں مزاری نے کہا ہے کہ آج عمران خان پر جھوٹا الزام لگا تو تمام حکومتی ارکان کو عزت یاد آگئی ان کی اس وقت عزت کہاں تھی جب خواجہ آصف نے ان دی فلور آف دی ہائوس مجھے گالی دی اگر انکوائری بیٹھانی ہے تو خواجہ آصف پر بھی بٹھائیں، انہوں نے مطالبہ کیا کہ اگر حکومت عورتوں کے حقوق پر انکوائری کرتی ہے تو خواجہ آصف کو اس میں ڈالیں شیریں مزاری کاکہنا تھا کہ عائشہ گلالئی کے پاس اگر ثبوت ہیں تو وہ ثبوت پیش کریں انہوں نے کہاکہ مسلم لیگ (ن) نے جو شہید بے نظیر کی جو فوٹو شاپ کیں جمائمہ پر جو الزام لگائے ان سارے الزامات پر انکوائری ہونی چاہیے ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا کہ فلور آف دی ہائوس نئی کابینہ تشکیل پر مبارکباد پیش کرتی ہوں عائشہ گلالئی نے تین ایشو پر بات کی ہے جنرل الیکشن خواتین کی عزت اور اپنے پارٹی کے لیڈر پر الزامات ہیں لیڈر آف دی ہائوس نے اس پر انکوائری کی بات کی ہے مجھے سمجھ نہیں آئی کہ پی ٹی آئی اس پر کیوں شور مچارہی ہے انہوں نے کہا کہ قومی اسمبلی کے سکیورٹی سٹاف میں تعینات خاتون سٹاف نے مجھے سینئر افسران کی طرف سے ہراساں کرنے کی نشاندہی کی میں نے سپیکر کو بارہا اس کی نشاندہی کی لیکن آج تک اس پر کیا ایکشن لیا گیا کہیں سے کوئی جواب نہیں ملا انہوں نے ماریہ طور کے معاملہ پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ایک قومی ہیرو کی سکوائش پلیئر پر اس طرح کے الزامات لگانا افسوس ناک ہے انہوں نے کہا کہ اپوزیشن اور حکمران جماعت کی خواتین کے تفریق سے بالاتر ہوکر ہمیں خواتین کے حقوق کیلئے یکساں آواز بلند کرنا ہوگی انہوں نے کہا کہ آج ایوان میں مخصوص سیٹ پر منتخب ہونے والی خواتین ممبران احساس محرومی کا شکار ہیں مخصوص نشستوں سے منتخب ہونے والی اراکین کویکساں بنیادوں پر حقوق فراہم کرتے ہوئے برابر فنڈز جاری کئے جانے چاہیے ۔ ایم کیو ایم کے رکن اسمبلی رشید گوڈیل نے وزیراعظم کی طرف سے عائشہ گلالئی کے معاملہ پر کمیٹی بنانے کے اقدام کا قابل تحسین قرار دیا اور کہا کہ ہمیں تذلیل نہیں کرنی ان کیمرہ کمیٹی کا قیام یقیناً قرین انصاف ہے انہوں نے وزیراعظم کے نوٹس میں لاتے ہوئے بتایا کہ گزشتہ برس کراچی میں مجھ پر ہونے والے قاتلانہ حملے میں مجھے پانچ گولیاں ماری گئیں آج سندھ پولیس نے اس کیس کو داخل دفتر کردیا ہے خواتین کے ساتھ ساتھ مرد ارکان کے حقوق کا بھی خیال کیاجائے رکن اسمبلی نعیمہ کشور نے جاری بحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کی طرف سے گلائی معاملہ پر بحث کی بجائے کمیٹی کے قیام کا اعلان قابل تحسین اقدام ہے انہوں نے کہا کہ عائشہ گلالئی کی طرف سے کے پی کے گورنمنٹ پر لگائے گئے کرپشن الزامات کی بھی تحقیقات ہونی چاہیے جماعت اسلامی کے رکن شیر اکبر خان نے نئی کابینہ اراکین کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ موجودہ دور میں کرپشن ایک سنگین مسئلہ ہے انہوں نے تجویز پیش کی کہ تمام سیاسی جماعتوں سے ایک ایک نمائندہ کو انکوائری کمیٹی کا حصہ بنایا جائے اور اس کے ساتھ ساتھ کرپشن کے لگے الزامات پر ایف آئی اے اور دیگر متعلقہ اداروں کو ایکشن لینے کی ہدایات کی جانی چاہیے رکن اسمبلی ثریا اصغر نے کہا کہ حالفہ متعارف کرائی گئی سیاست میں عورت کے ساتھ ساتھ ایوان کے تقدس کوبھی خطرات لاحق ہیں دائیں طرف کی اپوزیشن جماعت کے رویئے سے سیاست میں کوئی والدین اپنے بچیوں کو نہیں بھیجیں گئیں