پولیوسے متعلق آگاہی مہم کے سلسلے میں سیمینارکا انعقاد

راولپنڈی آرٹس کونسل اورروٹری کلب آف راولپنڈی کے اشتراک سے پولیوسے متعلق آگاہی مہم کے سلسلے میں سیمینار کا اہتمام کیا گیا۔وائس چانسلربارانی یونیورسٹی رائے نیازاحمدخان ناہیدمنظوراور گورنرروٹری کلب حاجی افتخاراحمدبطورمہمانان خصوصی شریک ہوئے جبکہ ای ڈی او ہیلتھ ڈاکٹرخالدرندھاوا، ،ڈاکٹربے نظیر،موسیٰ رضا،علامہ قاسم جعفری، مولانا حافظ محمداقبال،حافظ خالداس موقع پرموجودتھے۔ پولیو ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلربارانی یونیورسٹی رائے نیازاحمدخان کا کہنا تھا کہ پولیوکے مسئلے کومسئلہ نہیں سمجھنا چاہیے بلکہ اس کواپنے فرائض میں شامل کرنا چاہے۔ انھوں نے کہا کہ بارانی یونیورسٹی، اس کا سٹاف اورطلبہ خوداس مہم کوآگے بڑھائیں گے۔ ناہیدمنظورکا کہنا تھا کہ پورے ملک میں آگاہی کی کمی ہے اوراس پیغام کوگھرگھرپہنچانے کی ضرورت ہے۔گورنرروٹری کلب حاجی افتخاراحمدنے کہا کہ پولیوورکرزخاص طورپرخواتین کو شہیدکرنا بہت بڑاظلم ہے۔حاجی افتخارنے کہا کہ پوری دنیا میں صرف تین ممالک ہیں جہاں پولیوکاخاتمہ نہیں ہوسکا جن میں پاکستان، افغانستان اورنایئجیریا شامل ہیں مگران میں سب زیادہ کیسز پاکستان میں ہیں جو افسوس ناک ہیں۔ای ڈی اوہیلتھ داکٹرخالدرندھاواکا کہنا تھا کہ وہ چھ سال سے اس مہم سے وابستہ ہیں مگراتنا خوبصورت ایونٹ پہلی باردیکھا ہے جس کے لیے آرٹس کونسل اورروٹری کلب مبارک بادکی مستحق ہے۔انھوں نے کہ کہا کہ چند لوگوں کی وجہ سے پاکستان پولیو کے حوالے سے تنہا رہ گیا ہے۔صدرروٹری کلب راولپنڈی راشدمشکورنے کہا کہ آرٹس کونسل کے تعاون کے بغیراتنا بڑاپروگرام ممکن نہیں تھا اورمشترکہ کوششوں سے پولیوکا خاتمہ ممکن ہے۔ڈاکٹربے نظیرکا کہنا تھا کہ ویزے کی پابندی پولیو سے مشروط کرنا پاکستانیوں کی توہین ہے۔پاسٹرسیموئیل کا کہنا تھا کہ پاکستان سے پولیوکا خاتمہ کرکے باہمت قوم کاثبوت دیں گے۔سیمینار سے موسیٰ رضا، علامہ قاسم جعفری، مولانا محمداقبال، حافظ خالد،اوروقاراحمدریذیڈنٹ ڈائریکٹرنے بھی خطاب کیا ۔