کراچی کی تعمیر وترقی کے لئے وزیراعظم کا خصوصی پیکج

وزیراعظم محمد نوازشریف نے کراچی کے مسائل حل کرنے کے لئے اربوں کے جس پیکج کا اعلان کیاہے شہر قائد کے کم وبیش تمام ہی حلقوں نے اس کا خیر مقدم کرتے ہوئے اس توقع کا اظہار کیاہے کہ اس کے نتیجے میں شہر کے بہت سے دیرینہ مسائل حل ہوجائیں گے گورنر ہائوس کراچی میں وزیراعظم کی صدارت میں منعقدہ اعلی سطح کے اجلاس میں جہاں کراچی آپریشن کی کامیابیوں کا جائزہ لیاگیا وہاں وزیراعظم نے یہ ہدایت بھی کی کہ آپریشن کو مزید تیزکیاجائے اور اس کے حوالے سے تحفظ پاکستان قانون کے نفاذ کو یقینی بنایاجائے وزیراعظم نے اس امر پر برہمی کا اظہار کیا کہ ان کی صدارت میں منعقدہ گزشتہ اجلاس کے بعض فیصلوں پر ابھی تک عمل درآمد نہیں کیاجاسکا یہ وزیر اعلی سندھ اور ان کی حکومت کی ذمے داری ہے کہ وہ تمام فیصلوں پر جلد عمل درآمد کو یقینی بنائیں ان فیصلوں کا تعلق امن کی بحالی اور شہریوں کو سہولتوں کی فراہمی سے ہے اورعمل درآمد میں تاخیر کا واضح مطلب عوام کے مفادات سے پہلو تہی اور کوتاہی ہے وزیراعظم کی صدارت میں منعقدہ حالیہ اجلاس کا سب سے اہم پہلو یہ ہے کہ اس میں وزیراعظم نے سندھ اور بالخصوص کراچی میں مختلف منصوبوں کے لئے اربوں کے پیکج کا اعلان کیاہے انہوں نے پندرہ ارب روپے کی لاگت سے کراچی میں تیز رفتار میٹروبس کا منصوبہ شروع کرنے کا اعلان کیاہے اس منصوبے کا نام گرین لائن ان کراچی ہوگاسرجانی ٹائون سے سٹی سینٹر کراچی تک چوبیس کلو میٹر طویل ٹریک کے تمام اخراجات وفاقی حکومت برداشت کرے گی وزیراعظم نے گورنر سندھ کی تجویز پر ملیر موٹروے کے لئے42 ارب روپے کی منظوری بھی دی جبکہ وزیراعظم کی طرف سے فراہمی آب کے ایک منصوبے کا اعلان بھی کیاگیاہے جس پر تیرہ ارب روپے خرچ ہوں گے اس منصوبے کے تحت کراچی کو منچھر جھیل سے پانی فراہم کیاجائے گا اس منصوبے کی لاگت کا پچاس فیصد وفاقی حکومت اور پچاس فیصد سندھ حکومت برداشت کریں گی ایم کیو ایم نے کراچی کے منصوبوں کے لئے خطیر رقوم مختص کرنے پر وزیراعظم کے اعلان کاخیر مقدم کرتے ہوئے اسے اہلیان کراچی کے لئے عید کا تحفہ قرار دیاہے ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی کے رکن ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ وزیراعظم نے کراچی کے لئے260ملین گیلن اضافی پانی کی فراہمی کے لئے پچیس ارب روپے کی منظوری دی ہے اضافی پانی کی فراہمی ایم کیو ایم کا دیرینہ مطالبہ تھا وفاقی حکومت کی طرف سے سندھ کی تعمیر وترقی کے لئے رقوم کی فراہمی کا اعلان اس امر کی نشاندہی کرتاہے کہ وزیراعظم نوازشریف بحیثیت وزیراعظم ملک کے ہر حصے کے مسائل حل کرنے اور متعلقہ عوام کی تعمیر وترقی اور خوشحالی میں دلچسپی رکھتے ہیں ماضی کی یہ منفی سوچ اب دم توڑ چکی ہے کہ حزب اختلاف کے حلقوں اور صوبوں کو نظر انداز کر دیاجائے وزیراعظم نوازشریف کی اس قومی سوچ نے ان کے سیاسی قدوقامت میں نمایاں اضافہ کیاہے۔