Get Adobe Flash player

نصر میزائل نے کولڈ سٹارٹ بھارتی نظریہ تحلیل کر دیا

پاکستان نے زمین سے زمین پر مار کرنے والے نصر میزائل کا کامیاب تجربہ کیا ہے جبکہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ نصر میزائل نے بھارت کے جنگی نظریے کولڈ سٹارٹ پر ٹھنڈا پانی ڈال دیا ہے اس میزائل کی رینج ستر کلو میٹرہے۔ یہ میزائل شکن دفاعی نظام سے بھی لیس ہے آرمی چیف نے آرمی سٹریٹجک فورس کے تربیتی معیار اور آپریشنل تیاریوں کو سراہا انہوں نے پاکستان کی قابل اعتماد کم سے کم دفاعی صلاحیت کی طرف اہم سنگ میل حاصل کرنے پر سائنسدانوں اور انجینئرز کو مبارکباد دی انہوں نے سٹریٹجک فورس سے کہا کہ آپ ہمارے اصل  اور پس پردہ رہ  کر کام کرنے والے ہیرو ہیں۔ آرمی چیف نے کہا کہ ہر قیمت پر جنگ سے بچنا چاہیے اور کسی کو بھی یہ نہیں سوچنا چاہیے کہ جنگ بھی کوئی آپشن ہے تاہم ہماری سٹرٹیجک صلاحیت درحقیقت زیادہ فو ج رکھنے اور جنگی جنون میں مبتلا پڑوسی ملک کے خلاف امن کی ضمانت ہے جبکہ پاکستان خطے میں امن و استحکام کو یقینی بنانے کے لئے کسی بھی حد تک جائے گا۔ بھارتی فوج نے 2001ء میں پاکستان کے خلاف کولڈ سٹارٹ ڈاکٹرائن تشکیل دیا محدود لڑائی  کے اس جنگی نظریہ کے تحت یہ سوچا گیا کہ بھارتی فورسز اچانک ہلہ بولتے ہوئے تیزی سے پاکستانی علاقوں میں گھس جائیں اور عالمی طاقتوں کی طرف سے جنگ بندی کے مطالبے سے پہلے ہی پاکستان کو خاطر خواہ نقصان پہنچایا جائے یہی وجہ تھی کہ بھارت نے سرحد کے قریبی علاقوں میں چھائونیاں قائم کیں تاکہ کم سے کم وقت میں بھارتی فوج کارروائی کرسکے پاکستان نے کم فاصلے تک زمین سے زمین پر مار کرنے والے بیلسٹک میزائل تیار کرکے بھارت کے کولڈ سٹارٹ ڈاکٹرائن کو بیکار کر دیا ہے آرمی چیف نے بجا طور پر کہا کہ نصر میزائل نے کولڈ سٹارٹ پر ٹھنڈا پانی ڈال دیا ہے اب جونہی بھارتی فوج  پاکستان کی طرف نقل و حرکت  کرے گی یہ میزائل اسے سبق سکھائیں گے اور اس کا راستہ اس انداز سے روکیں گے کہ وہ الٹے قدموں بھاگنے کی پوزیشن میں بھی نہیں ہوگی مگر درست کہا جنرل قمر جاوید باجوہ نے  کسی کو بھی یہ نہیں سوچنا چاہیے کہ جنگ بھی کوئی آپشن ہے ہر قیمت پر جنگ سے بچنا چاہیے اور تمام مسائل مذاکرات سے حل کرنے چاہئیں یہ امر قابل ذکر ہے کہ عسکری ماہرین نے بھی نصر میزائل کو بھارت کی کولڈ سٹارٹ ڈاکٹرائن کا منہ توڑ جواب قرار دیا ہے۔ یہ میزائل پاکستان کی فل سپیکٹرم ڈیڑنس پالیسی کا حصہ  ہے جو بھارت کی طرف سے محدود یا مکمل جنگ کی صورت میں اس کی بے تحاشا فوجی طاقت کے مقابلہ کے لئے چھوٹے جوہری ہتھیار تیار اور استعمال کرنے پر مبنی ہے اس پالیسی کا فیصلہ نومبر 2015ء میں وزیراعظم نواز شریف کی صدارت میں نیشنل کمانڈ اتھارٹی کے اجلاس میں کیا گیا۔نصر میزائل کے کامیاب تجربے نے پاکستان کے دفاع کو ناقابل تسخیر بنا دیا ہے اور دشمن کے سارے منصوبوں پر پانی پھیر دیا ہے قوم اس کامیابی پر سائنسدانوں ' انجینئروں اور تمام متعلقہ کارکنوں کو مبارکباد پیش کرتی ہے صدر ممنون حسین' وزیراعظم نواز شریف' چیئرمین جوائنٹ چیف آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات' پاک فضائیہ کے سربراہ ائیر چیف مارشل سہیل  امان  اور پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل محمد ذکاء اللہ نے میزائل کی تیاری اور اس کے  تجربہ میں شامل تمام سٹریٹجک فورسز کی کوششوں کو سراہتے ہوئے انہیں خراج تحسین پیش کیا ہے۔