Get Adobe Flash player

محنت۔۔۔ملک خالد محمود

اس کانام جیری کوم تھا  یوکرائن کی معاشی تنگدستی  اور سیاسی عدم استحکام نے اسے ہجرت کرنے پر مجبور کر دیا اس نے اپنی والدہ کے ساتھ بہتر معاشی مستقبل کا سپنا سجائے امریکہ کا رخ کیا لڑکے نے مائونٹین  ویو کے سکول میں داخلہ لے لیا وہ پڑھائی کے ساتھ ساتھ سبزی کی دکان پر فرش دھونے کا کام  بھی کرتا  تاکہ چند ڈالر مل سکیںگریجویشن کرنے کے بعد اس نے فیس بک میں جاب کے لئے اپلائی کیامگر مالک نے جاب دینے سے انکار کر دیا  2009 کے ادائل میں ایسا انسٹنٹ میسجنگ ایپلی کیشن بنانے کا خیال آیا جو  فری  ہو اور تمام اقسام کے فونز پر استعمال کیا جاسکے آخر فروری 2009میں واٹس ایپ کمپنی کی بنیاد ڈالی چند عرصہ قبل فیس بک نے تاریخ کا سب سے بڑا سودا کرتے ہوئے واٹس ایپ خرید لیا یہ وہ فیس بک تھی جس نے جیری کوم کو جاب دینے سے بھی انکا رکیا تھا امریکہ کی اخبار نے فیس بک کی جانب سے یوکرائنی انجینئیر کو جاب نہ دینے کے فیصلے کو کئی ارب ڈالر کی غلطی قرار دیا ۔  وارن بفٹ کو کون نہیں جانتا یہ دنیا کا دوسرا امیر ترین آدمی ہے یہ شروع میں بہت غریب تھا بچپن میں کھانے کے وقت دوسروں کے گھر پہنچ جایا کرتا تھا اس کا بچپن دوسروں سے لفٹ مانگتے گذرا اس نے اخبارات فروخت کر کے اپنے کیرئیر کا آغاز کیا  محنت کو اپنا شعار بنایا  اس کے پاس ایک معمولی سائیکل ہوا کرتی تھی اب ذاتی جہاز ہیں  اس کی فیکٹریوں، کمپنیوں اور زمینوں پر بارہ ہزار لوگ ملازم ہیں ۔  ملک ریاض پاکستان کے چند امیر ترین لوگوں میں شمار ہوتے ہیں ان کی محنت اور ذہانت کی اپنی داستان ہے جسے ڈرائیونگ کے علاوہ کوئی دوسرا ہنر نہیں آتا تھاجس کے زندگی کے پہلے ٹھیکے کی مالیت پندرہ سو روپے تھی اس نے سڑک بنانے کا ٹھیکہ لیا پھر قسمت کے دروازے کھلتے چلے گئے  محنت کو جاری رکھتے ہوئے ہائوسنگ سیکٹر کو باقاعدہ لائف سٹائل میں تبدیل کرتے ہوئے پاکستان کی سب سے بڑی ہائوسنگ سکیم کا سنگ بنیادر کھا اور بیرونی سرمایہ کاروں اور غیر ملکی کمپنیوں کو پاکستان آنے اور کام کرنے پر راضی کیا تاریخ کے اوراق ایسے لوگوں کے تذکروں سے معطر رہتے ہیں جن کا جینا مرنا کسی عظیم مقصد کے لئے ہوتا ہے جو زندگی کے ودیعت کردہ لمحات اور وقت کی قدروقیمت کو جانتے اور ان کے مفید استعمال کا کامل ادراک رکھتے ہیں میں ایسے بہت سار ے لوگوں کو جانتا ہوں جنھوں نے زیرو سے سٹارٹ لیا اور کم وقت میں محنت کو شعار بناتے ہوئے بے پناہ کامیابیاں حاصل کیںان میں ایک نام   ضلع اٹک   میں پاکستان تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے ملک سہیل کمڑیال  کا ہے  آپ  ایک دلپذیر شخصیت کے مالک ہیں ان میں متعد د خوبیاں ہیں اگر ان کی کسی ایک خوبی کی نشاندہی کرنی ہو  جو ان کی ذات کی کلید ٹھہرے اور جس کا عکس ان کی شخصیت کے باقی تمام پہلووں میں ڈھونڈا جا سکے تو وہ خوبی ان کی انسان دوستی ہے ہر تعصب اور تنگ نظری سے بالاتر ہو کر صرف انسان کے ناطے انسان سے محبت ۔ محبت وہ جو انسانی کمزوریوں اور علتوں پر قابو پالیتی ہے اور طبائع کے ہر مرض کا علاج ہے انسانوں سے محبت کرنے والا شخص اپنی فطرت میں مجلسی ہوتا ہے  اور ہمیشہ لوگوں سے ملنے جلنے اور ان کے ساتھ مل بیٹھنے کا آرزو مند رہتا ہے   ان کا سیاسی کردار ماضی اور حال سب کے سامنے آئینے کی طرح شفا ف ہے ا یک بہادر باپ کا بہادر بیٹا اپنے باپ کے نقش قدم  پر چلتے ہوئے علاقے کی تعمیر وترقی کے لئے دن رات ایک کئے ہوئے ہے ان کے ہاتھ اور منہ کرپشن اور زمینی حقائق کی کالک سے محفوظ ہیں ۔ آپ کی علاقے کے لئے خدمت کی مثال صرف پارٹی والے نہیں بلکہ اپوزیشن والے بھی دیتے ہیں ۔آپ کے مدبرانہ فیصلوں کی بدولت ضلع بھر میں پاکستان تحریک انصاف کا وقار بلند ہوا   انھوں نے ہمیشہ اصولوں کی سیاست کی اور نامسائد حالات میں بھی ڈٹ کر مقابلہ کیا  اور اقتدار کو ٹھوکر ماری جویہ چیز ثابت کر تی ہیں کہ ان کی سیاست کا مقصد اقتدار نہیں اقدار کی سیاست کو فروغ دینا ہے اور یہی جمہوریت کا حسن ہے آپ جیسے لوگ اس معاشرے میں آج بھی بہت کم ملتے ہیں جو قول وفعل میں یکتا ہیں منہ پر بات کہہ دیتے ہیں مگر منافقت نہیں کرتے   انتہائی اعلیٰ اخلاق کے حامل شخص نے نہ صرف انتظامی امور پر اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا بلکہ فلاحی کاموں میں بھی آپکا کوئی ثانی نہیں  ملک سہیل کمڑیال کے پاس اللہ کا دیا سب کچھ ہے  اتنا کچھ ہونے کے باوجود بھی  ملک صاحب  اپنی غربت کو نہیں بھولے یہ  غریبوں کے ساتھ ملکر بیٹھتا ہے   آپ اس سے لڑ بھی لیں پھر بھی ناراض نہیں ہوتا ان کے اندر بغض اور نفرت نام  کی کوئی چیز نہیں  مہمان کو دروازے تک خود چھوڑ کر  خود آتا ہے  ملک سہیل کمڑیال کی عوام کے ساتھ بے لوث محبت اور والہانہ عقیدت نے مجھے مجبور کر دیا کہ میں لکھوں اس ہستی میں کون سی ایسی چیز یا سحر ہے کہ ہر چھوٹا ، بڑا، بچہ اور بوڑھا انہیں اپنی امید کا مرکز مانتا ہے  تو مجھے ایک ہی چیز نظر آتی ہے اور وہ ہے ان کے فلاحی کام جن کا اجر ان کو خدا کی ذات کے سوا کوئی دوسرا نہیں دے سکتا   ایک مخصوص حصہ غریب لوگوں کے لئے وقف کیا ہوا ہے آج آپ کی بدولت کئی گھروں کے چولہے جلتے ہیں   انھوں نے اپنے معاملات میں دیانت داری  کو مقدم رکھا ہوا ہے   یہ  لوگوں کی امداد نہایت ہی رازداری سے کرتے ہیں  یہ وہ واحد لیڈر ہے جس نے کم وقت میں بیشمار کامیابیاں سمیٹنے کا اعزاز حاصل کیا  یہ علاقے کے لوگوں کی دعائوں کا صلہ ہے کہ اللہ پاک نے آپ کو ہر مقصد میں کامیابی دی میری دعا ہے کہ وہ اپنے مقاصد کی تکمیل کے ساتھ سا تھ خدمت کے مشن کو  جاری رکھیں گے ہر ناکامی کامیابی کی امید لے کر آتی ہے جو ہمارے نصیب میں نہیں ہوتا اس پر حوصلہ نہیں ہارنا چاہیے وہی ناکامی ہمارے اچھے کی امید ہوتی ہے صرف ہمارے کردار کے چند لمحوں کا امتحان ہوتا ہے۔ ہم سب کوملک سہیل کمڑیال کی طرح محنت کرنی چاہیے جو لوگ محنت کرتے ہیں کامیابی انکا مقدر بنتی ہے ہمیں ان کی کوششوں سے سبق حاصل کرنا چاہیے ہمیں اپنی ذاتی وابستگیاں ذاتیات سے ہٹ کرسب سے پہلے انسانیت کی بھلائی کی طرف ڈھالنی ہوں گی اور لوگوں کی دعائیں لینا ہوگی اگرہماری سوچ اسی طرح ہو جائے تو کوئی شک نہیں اہم اس نظام میں مزید تبدیلیاں لا سکتے ہیں اور ہمارے بہت سارے مسائل خود بخود ختم ہو سکتے ہیں ۔