Get Adobe Flash player

September 2016

30 September 2016

کنٹرول لائن ،بھارت کی گولہ باری،پاک فوج کے 2جوان شہید،جوابی کارروائی میں دشمن کا بھاری نقصان

بھارت نے لائن آف کنٹرول پر پاکستان کے زیرِ انتظام علاقے میں مبینہ شدت پسندوں کے خلاف سرجیکل سٹرائیکس کرنے کا دعویٰ کیا جسے پاکستان نے مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ سرحد پار فائرنگ کو سرجیکل سٹرائیکس کا رنگ دینا حقیقت کو مسخ کرنے کے برابر ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق وزارت دفاع نے کہا ہے کہ بدھ کی شب کی جانے والی اس کارروائی میں متعدد شدت پسند مارے گئے ہیں۔نئی دہلی میں بھارتی وزارت خارجہ اور وزارت دفاع کی ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بری فوج کے ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز لیفٹیننٹ جنرل رنبیر سنگھ نے بتایا کہ سرجیکل آپریشن کنٹرول لائن پر نصف رات شروع ہوا اور صبح تک چلا ہے۔انھوں نے کہا کہ کنٹرول لائن کے اس جانب دہشت گرد جموں و کشمیر اور ملک کے دوسرے شہروں میں تخریب کاری کی غرض سے دراندازی کے لیے جمع ہوئے تھے جنھیں ختم کر دیا گیا ہے۔لیفٹیننٹ جنرل رنبیر سنگھ نے کہا کہ اس کارروائی میں متعدد دہشت گرد اور ان کے سہولت کار مارے گئے ہیں۔ تاہم انھوں نے یہ واضح نہیں کیا کہ سرجیکل سٹرائیکس کن علاقوں میں کی گئیں۔اس نیوز کانفرنس سے قبل بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے سلامتی سے متعلق کابینہ کے ایک ہنگامی اجلاس کی صدارت بھی کی۔اس اجلاس میں وریر دفاع ، وزیر داخلہ اور وزیر خزانہ کے علاوہ قومی سلامتی کے مشیر اور بری فوج کے سربراہ بھی شریک تھے۔بھارت کی جانب سے سرجیکل سٹرائیکس کے دعوے کے بعد جمعرات کو پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت نے پاکستان کے زیرِ انتظام علاقے میں کوئی سرجیکل آپریشن نہیں کیا ہے تاہم بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول پر کیل، بھمبر اور لیپا سیکٹر پر بلا اشتعال فائرنگ ضرور کی ہے۔آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ مبینہ دہشت گردوں کے اڈوں پر سرجیکل حملوں کا تصور بھارت کی جانب سے جان و ملک کی سیاسی و عسکری قیادت نے بھارتی جارحیت کی سختی سے مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاک افواج ملک کے چپے چپے کی حفاظت کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہیں ۔ بھارت کو منہ توڑ جواب دیا جائے گا ۔سرجیکل سٹرائیک کا بھارتی دعویٰ جھوٹ کا پلندہ ہے پوری قوم پاک فوج کے شانہ بشانہ لڑنے کے لئے تیار ہے اس عزم کا اظہار وزیر اعظم نواز شریف اور آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے درمیان ہونے والے ٹیلی فونک رابطہ کے دوران کیا گیا دونوں رہنمائوں نے آزاد کشمیر کے کنٹرول لائن پر بھارت کی جانب سے بلااشتعال فائرنگ اور اس کے بعد کی صورت حال پر تفصیلی گفتگو کی ۔ دونوں رہنمائوں نے بھارت کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کے عزم کا اظہار کیا آرمی چیف نے کنٹرول لائن پر ہونے والی فائرنگ سے بھی آگاہ کیا ۔ذرائع کے مطابق آرمی چیف نے بھارتی سرجیکل سٹرائیک کے دعوے کو جھوٹ کا پلندہ اور بے بنیاد قرار دیا اور کہا کہ پاک افواج کے جوانوں نے بھارت کو منہ توڑ جواب دیا اور آئندہ اگر بھارت کی جانب سے ایسی حرکت کی گئی تو بھرپور جواب دیا جائے گا ۔آرمی چیف نے کہا کہ ملکی سلامتی کے لئے مسلح افواج مکمل تیار ہے ۔ اس موقع پر وزیر اعظم نے کہا کہ پوری قوم پاک فوج کے ساتھ کھڑی ہے اور پوری قوم کا جذبہ وطن کی حفاطت کے لئے بلند ہے انہوں نے کہا کہ پاک فوج ملک کے چپے چپے کی حفاظت کرنا اچھی طرح جانتی ہے اور وطن کے دفاع کے لئے کسی بھی قسم کی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ۔ وزیر اعظم نے جام شہادت نوش کرنے والے دو فوجی جوانوں کو خراج عقیدت پیش کیا ۔ دو سری طرف بھارتی جارحیت پر بھارتی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ طلب کیا اور شدید احتجاج کیا گیا ۔

Read more

30 September 2016

اندان شکن جوابی کارروائی، 8بھارتی فوجی جہنم واصل، 1گرفتار،ذرائع

 بھارت کی طرف سے لائن آف کنٹرول کی پہلی دفاعی لائن پر بلااشتعال فائرنگ کے جواب میں پاکستانی فوج کی فائرنگ سے تتہ پانی سیکٹر میں بھارتی فوج کے 6 سے 8 اہلکار ہلاک ہوگئے جبکہ ایک بھارتی فوجی کو گرفتار کرلیا گیا۔بھارتی فوجیوں کی ہلاکتیں ایل او سی پر بلااشتعال فائرنگ کے بعد پاکستان کی جوابی کارروائی کے نتیجے میں ہوئیں، بھارتی فوج کی فائرنگ سے 2 پاکستانی فوجی شہید ہوئے تھے۔میڈیا رپورٹس میں سکیورٹی ذرائع نے بھارتی فوجیوں کے ہلاک ہونے اور ایک کے گرفتار ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ گرفتار بھارتی فوجی کی شناخت چندو بابولعل چوہان کے نام سے ہوئی ہے جسے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا۔گرفتار بھارتی فوجی کے والد کا نام بشھن چوہان اور اسکی عمر 22 سال ہے جبکہ اس کا تعلق مہاراشٹرا سے ہے ۔سکیورٹی ذرائع کا کہنا تھا کہ پاکستان کی جوابی فائرنگ سے ہلاک ہونے والے بھارتی فوجیوں کی لاشیںتاحال لائن آف کنٹرول پر پڑی ہوئی ہیں اور بھارتی فوجی اپنے ساتھیوں کی لاش اس لیے نہیں اٹھا رہے کیونکہ انہیں خطرہ ہے کہ اگر وہ لائن آف کنٹرول کے قریب دوبارہ آئے تو وہ بھی مارے جائیں گے۔

Read more

30 September 2016

بڑے چیلنجز درپیش، پر امن خوشحالی و ترقی یافتہ پاکستان ہماری منزل ہے،شہبازشریف

 وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان کو بڑے چیلنجز درپیش ہیں' پرامن' خوشحال اور ترقی یافتہ پاکستان ہماری منزل ہے' پاکستان میں تمام شہریوں کو یکساں اور آئین کے مطابق حقوق حاصل ہیں' تعلیم' صحت اور سماجی شعبوں کی بہتری کے لئے اربوں روپے کے وسائل فراہم کئے' چائلڈ لیبر کا خاتمہ کرکے بچوں کو حکومت کے اخراجات پر سکول بھیجا گیا۔ جمعرات کو وزیراعلیٰ سے اقوام متحدہ کے ریذیڈنٹ کوآرڈینیٹر کی سربراہی میں وفد نے ملاقات کی جس میں وفد نے تعلیم' صحت اور سماجی شعبوں میں بہتری لانے کے لئے پنجاب حکومت کے اقدامات کو سراہا۔ ملاقات کے دوران اقوام متحدہ کے ریذیڈنٹ کوآرڈینیٹر نیل بونیے نے کہا کہ تعلیم' صحت اور سماجی شعبوں کی بہتری کے لئے بجٹ میں خطیر اضافہ کیا گیا ۔ پنجاب حکومت کی سماجی شعبوں کی بہتری کے لئے اقدامات قابل تحسین ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں انسداد پولیو کیلئے اقدامات بھی شاندار اقدامات کئے گئے شہباز شریف کی ذاتی کاوشوں کے باوجود چائلڈ لیبر کا بھی خاتمہ کیا گیا خواتین کو بااختیار بنانے' تشدد کی روک تھام کے لئے اقدامات قابل ستائش ہیں۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان کو بڑے چیلنجز درپیش ہیں پرامن' خوشحال اور ترقی یافتہ پاکستان ہماری منزل ہے۔ دہشت گردی اور انتہا پسندی سے نمٹنے کے لئے سیاسی و عسکری قیادت پرعزم ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج کا پاکستان پہلے سے کہیں زیادہ مضبوط اور پرامن ہے۔ پاکستان میں تمام شہریوں کو یکساں اور آئین کے مطابق حقوق حاصل ہیں۔ تعلیم' صحت اور سماجی شعبوں کی بہتری کے لئے اربوں روپے کے وسائل فراہم کئے گئے تشدد کا نشانہ بننے والی خواتین کے لئے خصوصی سنٹرز قائم کئے جارہے ہیں اور خواتین کو بااختیار بنانے کے لئے ضروری قانون سازی کی گئی ۔ چائلڈ لیبر کا خاتمہ کرکے بچوں کو حکومت کے اخراجات پر سکول بھیجا گیا۔

Read more

30 September 2016

احتساب کا سونامی آج رائیونڈ کا رخ کریگا، عوام مسلم لیگ کے سوا کوئی جماعت شرکت نہیں کریگی

پاکستان تحریک انصاف کرپشن کیخلاف جاری تحریک کے سلسلہ میں آج ( جمعہ) کو رائیونڈ کی طرف مارچ کرے گی جس کے اختتام پر رائیونڈ اڈہ پلاٹ پر جلسے کاانعقاد کیا جائے گا ،تحریک انصاف کے ملک بھر سے کارکنوں کے قافلے لاہور پہنچنا شروع ہو گئے ،تحریک انصاف نے مارچ اور جلسے جبکہ پولیس اور ضلعی انتظامیہ نے سکیورٹی سمیت تمام انتظامات مکمل کر لئے ،پی ٹی آئی کورائیونڈ مارچ اور جلسے میں عوامی مسلم لیگ کے سوا اپوزیشن کی کسی جماعت کی حمایت حاصل نہیں ۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کرپشن کے خلاف تحریک کے سلسلہ میں آج جمعہ کو رائیونڈ کی طرف مارچ کرے گی جسکے اختتام پر رائیونڈ اڈا پلاٹ میں جلسے کا انعقاد کیا جائے گا جس سے عمران خان اور دیگر مرکزی قائدین خطاب کریں گے۔ تحریک انصاف کی آرگنائزنگ کمیٹیوں کی طرف سے احتساب مارچ اور جلسے کے انتظامات کو حتمی شکل دیدی گئی ہے ۔ لاہور کی مختلف شاہراہوں خصوصاً ریلی کے روٹ پر بینرز آویزاں کردیئے گئے ہیں جس پر احتساب کے نعرے درج ہیں۔ تحریک انصاف کے ملک بھر سے کارکنوں کے قافلے رائیونڈ مارچ اور جلسے میں شرکت کیلئے لاہور پہنچنا شروع ہو گئے اور یہ سلسلہ آج بھی جاری رہے گا۔دوسری طرف پی ٹی آئی کو رائیونڈ مارچ میں اپوزیشن کی بڑی جماعتوں کی حمایت حاصل نہیں ۔ پی پی ،(ق) لیگ ،جماعت اسلامی اور عوامی تحریک سمیت دیگر اپوزیشن جماعتوں کی حمایت حاصل نہیں اور صرف شیخ رشید کی جماعت عوامی مسلم لیگ کے کارکن مارچ اور جلسے میں شریک ہوں گے۔ پی ٹی آئی کے مرکزی رہنمائوں کی طرف سے مارچ اور جلسے کی کامیابی کیلئے غیر رسمی اجلاسوں کا سلسلہ بھی جاری ہے ۔ ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی کے رہنمائوں نے حکومت کی طرف کسی بھی طرح کی رکاوٹیں ڈالنے کی صورت میں پلان بی تیار کر لیا ہے جسے بوقت ضرورت پارٹی سربراہ کی اجازت سے عملی جامہ پہنایا جائے گا ۔ کارکنوں کی گرفتاریوں کی صورت میں شہر کی اہم شاہراہوں کو جام کرنے اور متعلقہ تھانوں کا گھیرائو کرنا حکمت عملی میں شامل ہے ۔ پی ٹی آئی کی طرف سے اڈا پلاٹ میں جلسے کے لئے تمام تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں ۔ دوسری طرف پولیس اور ضلعی انتظامیہ نے بھی اپنے انتظامات مکمل کر لئے ہیں ۔ مارچ کی قیادت کرنے والے رہنمائوںاور شرکاء کو فول پروف سکیورٹی کی فراہمی کیلئے 7ہزار سے زائد پولیس افسران و اہلکار حفاظتی ڈیوٹیوں پر تعینات ہوں گے ۔جبکہ ٹریفک پولیس کے افسران اور درجنوں اہلکار بھی ٹریفک کے نظام کو کنٹرول کرنے کے لئے تعینات ہوں گے۔



Read more

30 September 2016

اشتعال انگیز تقریر نہ کی جائے، لاہور ہائیکورٹ کی رائیونڈ مارچ کی اجازت

 لاہور ہائی کورٹ کے قائم مقام چیف جسٹس شاہد حمید ڈار کی سربراہی میں قائم تین رکنی فل بینچ نے تحریک انصاف کو رائیونڈ مارچ کی اجازدت دیتے ہوئے حکم دیا کہ جلسے میں کسی بھی قسم کی اشتعال انگیز تقریر نہ کی جائے۔ جمعرات کے روز عدالت نے اپنا محفوظ کر دہ فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی اپنے طے شدہ شیڈول کے مطابق 30 ستمبر کو رائے ونڈ میں جلسہ کرنے میں آزاد ہے اور انہیں فول پروف سکیورٹی فراہم کی جائے۔ انتظامیہ اور جلسے کے منتظمین شرپسندوں سے ہوشیار رہیں اور شرپسندوں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے۔ کسی سیاسی کارکن کو غیر ضروری طور پر ہراساں یا گرفتار نہ کیا جائے عدالت نے حکم دیا کہ تحریک انصاف اور ڈی سی او کے درمیان جو ضابطہ اخلاق طے پایا ہے، فریقین اس پر سختی سے کاربند رہیںدرخواست گزار اے کے ڈوگر ایڈووکیٹ نے استدعا کی کہ عمران خان ملکی استحکام کے خلاف تقاریر کرتے ہیں، انہیں ایسی تقاریر کرنے سے روکا جائے، جس پر پی ٹی آئی کے وکیل احمد اویس نے موقف اختیارکیا کہ انہیں ایم کیو ایم کے بانی الطاف حسین کی تقاریر نظر نہیں آتیں، ان کے خلاف درخواست دائر کیوں نہیں کی جس پر جسٹس انوار الحق نے کہا کہ سیاسی جماعتیں اپنی ڈائیلاگ بازی سیاسی میدان میں کریں، ایسی بیان بازی کیلئے عدالت مناسب فورم نہیں۔

Read more

30 September 2016

بھارتی وزیراعظم کے بیانات سے پاکستان کو تنہا نہیں کرسکتے، ترجمان دفتر خارجہ

 دفترخارجہ کے ترجمان نفیس زکریا نے کہا ہے کہ پاکستان ہر سطح پر کشمیریوں کی حمایت کریگا ، پاکستان نے تمام عالمی فورمز پربھارتی جارحیت کوبے نقاب کیا، وزیراعظم نواز شریف نے مسئلہ کشمیر کو بین الاقوامی سطح پر اجاگر کرنے کے لئے خصوصی نمائندے مقرر کئے، پاکستان حق خود ارادیت کے حصول کی منصفانہ جدوجہد میں کشمیریوں کی اخلاقی ، سیاسی اور سفارتی حمایت جاری رکھے گا، اس مسئلے کے حل کے لئے تمام ممکنہ کوششیں کی جائیں گی۔ جمعرات کو ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نے ہفتہ وار بریفنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بھارتی افواج کے ہاتھوں زخمی ہونے والوں کی تعداد 12ہزار سے تجاوز کر چکی ہے۔مقبوضہ کشمیر میں شہدا کی تعداد 110جبکہ آنکھوں کی بینائی متاثر ہونے والے کشمیریوں کی تعداد 108ہو چکی ہے۔بھارتی جامعات میں کشمیریوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے جس میں کئی کشمیری طلبہ زخمی ہو چکے ہیں۔پاکستان کشمیریوں کی حمایت جاری رکھے گا۔23ستمبر سے شروع ہونے والی پاک روس مشقوں کا خیرمقدم کرتے ہیں۔بھارت امن کے ماحول کو سبوتاژکر رہا ہے۔ایران کا بحری بیڑا مشترکہ مشقوں کے لیے پاکستان پہنچا ۔ بھارت کے سارک کانفرنس میں شمولیت نہ کرنے کے فیصلے کا علم ہوا ہے۔بھارت کے سیاسی سطح پر سرگرمیوں سے ان کے سارک کانفرنس کو خراب کرنے کا پتہ چلتا ہے ۔گزشتہ 80روز سے بھارت کی مقبوضہ کشمیر میں وحشیانہ کاروائیوں میں 100سے زاید کشمیری مرد،بچے ،خواتین اور بزرگ شہید ہوے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کا سارک پر منفی ردعمل افسوسناک ہے،بھارت ماضی میں بھی ساک کانفرنس میں رکاوٹیں پیدا کرنے کی کوششیں کرتا رہا ہے۔ اقوام متحدہ کی کمیٹی بھارت کے شمالی کوریا کے ساتھ ایٹمی تعاون کی تحقیقات کر رہی ہے،بھارت کو اس حوالے سے جواب دینا ہے۔نفیس زکریا نے کہا کہ بھارت کی جانب سے لائن آف کنٹرول کی خلاف وزی کا جائزہ لے رہے ہیں،ڈی جی آئی ایس پی آر نے بھی ایل او سی کی بلا اشتعال خلاف ورزی کی تصدیق کرتے ہوئے ہمارے دو جوانوں کی شہادت کا بتایا ہے ،وزیر اعظم نے بھی بھارتی خلاف ورزی کی مذمت کی ،پاکستان کو بھارتی وزیر اعظم کے بیانات کے باعث تنہا نہیں کیا جا سکتا،سندھ طاس معاہدہ کسی مخصوص وقت کے لیے نہیں،معاہدے کے قوانین کے مطابق کوئی ایک ملک اس معاہدے میں یک طرفہ خلاف ورزی نہیں کر سکتا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 80 دن سے مقبوضہ کشمیر میں کشمیری عوام خوراک اور ادویات سے محروم ہیں،پاکستان مقبوضہ کشمیر میں صورتحال پر آواز بلند کرتا رہے گا،ہم کشمیری ڈائسپورا کی سرگرمیوں سے آگاہ ہیں،وزیر اعظم کے خصوصی سفیر بھی مختلف دارلحکومتوں میںمسئلہ کشمیر کو اجاگر کر رہے ہیں،پاکستان نے بھارت سے تمام مسائل بشمول کشمیر کے حل کے لیے مذاکرات پر زور دیا ہے،تاہم بھارت مزاکرات میں دلچسپی نہیں رکھتا،کئی اہم مواقع پر بھارت نے کافی قریب آنے کے باوجود مذاکرات سے بچنے کے لیے حیلے بہانے کیے ۔ ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ ایل او سی پر بھارت نے خلاف ورزی کی اور مبینہ طور پر ٹی وی پر اس کا اعتراف کیا ،بھارتی وزیر خارجہ کا کشمیر کو اٹوٹ ا گ قرار دینا غیرذمہ دارا نہ ہے،بھارتی وزیر خارجہ نے اس بیان سے کشمیر پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کی نفی کی جس کا اراکین ممالک کو نوٹس لینا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ نیویارک میں ہونے والے جنرل اسمبلی کے اجلاس میں کشمیر کا معاملہ اقوام عالم کے سامنے لایا گیا،حریت رہنماؤں کو حراست میں لیا گیا اورانسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی کی گئی۔بھارت کی جانب سے سات ہزار سے زائد فوج کو مقبوضہ کشمیر میں تعینات کیا گیا،پاکستان ہر سطح ہر کشمیریوںکی حمایت کا اعلان کرتا ہے۔ ترجمان نے کہا کہ بھارت کے سارک کانفرنس میں شمولیت نہ کرنے کے فیصلے کا علم ہوا ہے،بھارت کے سیاسی سطح پر سرگرمیوں سے ان کے سارک کانفرنس کو خراب کرنے کا پتہ چلتا ہے،بھارت کا سارک پر منفی ردعمل افسوسناک ہے ۔انہوں نے کہا کہ روس کے ساتھ مشترکہ فوجی مشقیں جاری ہیں ، ایرانی بحری بیڑے کو پاکستان میں خوش آمدید کہتے ہیں، چین کیساتھ بھی بڑے پیمانے پر مختلف پروجیکٹس جاری ہیں،اس سے کہیں یہ ظاہر نہیں ہوتا کہ پاکستان کو سفارتی سطح پر تنہا کیا گیا ہے،پاکستان کو سفارتی سطح پر تنہا کر دینا بھارت کا منفی پروپیگنڈا ہے۔


Read more

30 September 2016

واہگہ بارڈر پر پرچم کشائی کی تقریب، بھارتی سائیڈ پر سناٹا چھایا رہا

 بھارتی جارحیت کے بعد سیکورٹی فورسز کا حوصلہ بڑھانے کیلئے ڈی جی رینجرز پنجاب سمیت ہزاروں پاکستانی واہگہ بارڈ پر پرچم کشائی کی تقریب شر یک 'واہگہ بارڈر پر پرچم اتارنے کی تقریب شہریوں کی بھی بڑی تعداد افواج پاکستان کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے موجود رہیں 'بڑھکیں مارنے والے بھارتیوں کو سانپ سونگھ گیا' خوف کی وجہ سے بھارتی شہری بارڈر پر ہی نہ پہنچے'بھارتی سائیڈ پر موت کی خاموشی چھائی رہی 'دوربین سے بھی کوئی بھارتی شہر نظر نہ آیا 'ڈی جی رینجرز سمیت سمیت عوام کے پریڈ کے دوران نعرہ تکبیر اور پاکستان زندہ باد کے نعرے ' پاکستانی عوام کانے پاک فوج کے جوانوں سے بھرپور اظہار یکجہتی 'شر کاء دشمن کو منہ توڑ جواب دینے کے عزم کا اظہار کرتے رہے 'تحر یک انصاف کے وائس چیئر مین شاہ محمود قر یشی کی بھی پریڈ میں شر کت سیکورٹی فورسز کے حق میں نعرے لگاتے رہے ۔ تفصیلات کے مطابق جمعرات کے روز بھارتی فورسز کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر اشتعال انگیزی کی گئی جس کے نتیجے میں 2 جوانوں سمیت 3 افراد شہید ہوگئے جبکہ پاک فوج کی جوابی کارروائی میں 3 بھارتی چوکیاں تباہ ہوگئیں ایل او سی پر ہونے والی کشیدگی کے بعد پاکستانی عوام نے بلند حوصلے کا مظاہرہ کیا اور ہزاروں کی تعداد میں واہگہ بارڈر پر پرچم کشائی کی تقریب میں شرکت کیلئے پہنچ گئیپرچم کشائی کی تقریب میں ڈی جی رینجرز پنجاب نے بھی شرکت کی اور انتہائی اگلی طرف بیٹھ کر پریڈ دیکھی واہگہ بارڈر پر پریڈ کے دوران نعرہ تکبیر اور پاکستان زندہ باد کے نعرے لگتے رہے جبکہ پاکستانی عوام نے پاک فوج کے جوانوں سے بھرپور اظہار یکجہتی کیادوسری جانب بھارتی فوجی اکیلے ہی بارڈر پر موجودتھے اور ان کا حوصلہ بڑھانے کیلئے کوئی بھی شہری نہیں تھا بھارتی کرسیاں خالی پڑی رہیں اور وہاں موت کی سی خاموشی چھائی رہی ۔ پاکستانی قوم نے ایک بار پھر واہگہ بارڈر پر پرچم کشائی کی تقریب میں شرکت کرکے واضح کردیا ہے کہ یہ کسی کی گیدڑ بھبکیوں سے ڈرنے والے نہیں ہیں اور ان میں جذبہ شہادت کسی بھی دوسری قوم سے کہیں زیادہ ہے اور کبھی بھی وقت آیا تو یہ 1965 کی جنگ کی طرح پاک فوج کے شانہ بشانہ لڑیں گے اور شہادت کی موت کو بخوشی گلے لگائیں گے جبکہ تحر یک انصاف کے وائس چیئر مین شاہ محمود قر یشی کی بھی پریڈ میں شر کت سیکورٹی فورسز کے حق میں نعرے لگاتے رہے ۔


Read more

30 September 2016

بھارت جنگی جنون کو ہوا دے کر خطے کے امن کو دائو پر نہ لگائے، صدر ممنون

 صدر مملکت ممنون حسین نے کہاہے کہ کشمیریوں کی تحریک آزادی کامیاب ہو کررہے گی اور بھارت اوچھے ہتھکنڈوں سے مقبوضہ کشمیر میں مظالم سے توجہ نہیں ہٹا سکتا ہے۔ صدرمملکت ممنون حسین نے لائن آف کنڑول پربھارتی فائرنگ کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت جنگی جنون کوہوا دے کرخطے کے امن کو داؤ پرنہ لگائے، مسلح افواج غیر ملکی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کی صلاحیت رکھتی ہیں جب کہ بھارت اوچھے ہتھکنڈوں سے مقبوضہ کشمیرمیں مظالم سے توجہ ہٹا نہیں سکتا ہے۔ صدرممنون حسین نے مزید کہا کہ کشمیریوں کی تحریک آزادی کامیاب ہوکررہے گی، وطن عزیزکے دفاع کے لیے عوام اور مسلح افواج یکجان ہیں۔

Read more

30 September 2016

سرجیکل اسٹرئیک کے بھارتی دعوے مسترد ، ایسا ہو ا تو دشمن کونشان عبرت بنادینگے،پا ک فوج

بھارتی فوج نے ایک بار پھر روایتی ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے لائن آف کنٹرول پر مختلف سیکٹرز میں بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی جس کے نتیجے میں پاک فوج کے 2 جوان شہید اور 6 افراد زخمی ہو گئے۔جمعرات کو پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارتی فوج نے ایل او سی پر بھمبر، کیل ،ہاٹ سپرنگ اور لیپہ سیکٹرز میں بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی جس کے نتیجے میں پاک فوج کے دو جوان شہد ہو گئے۔ لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ رات ڈھائی بجے شروع ہوئی جو صبح آٹھ بجے تک جاری رہی ۔ آئی ایس پی آر کے مطابق پاک فوج کے جوانوں نے بھارتی فورسز کی بلا اشتعال فائرنگ کا بھرپور جواب دیا اور بھارتی گنیں خاموش کرادیں ۔دوسری جانب میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی فوج کی جانب سے پونچھ بٹل اور دودھنیال سیکٹرز میں بھی بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی گئی جس کے نتیجے میں 6 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں، اس کے علاوہ بھارتی فوج نے ناطر لچیال کی سول آبادی کو بھی نشانہ بنایا۔بھارتی افواج کی جانب سے وادی لیپا میں منڈا کنڈی کے مقام پر بھی فائرنگ کی گئی جب کہ بھارتی فورسز کی جانب سے وادی نیلم میں برنالہ کے جھمپ سیکٹر اور وٹالہ کے مقام پر بھی شدید فائرنگ کی گئی جس کے باعث وادی نیلم میں بڑی تعداد میں سیاح محصور ہو کر رہ گئے۔ فائرنگ اور گولہ باری کے باعث آبادی شدید خوف و ہراس پھیل گیا ۔ کنٹرول لائن پر واقع آبادیوں بنڈالہ، سماہنی اور چوکی شہر میں والدین نے بچوں کو سکول جانے سے روک دیا ۔واضح رہے کہ بھارت نے اس سے قبل بھی متعدد بار لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باؤنڈری پر سیز فائر کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پاکستانی املاک اور شہریوں کو نقصان پہنچا چکا ہے ۔

Read more

30 September 2016

قوم کی خدمت کرنے اور عوام کے دلوں کو جیتنے سے اقتدار ملتاہے ، حنیف عباسی

میٹرو بس کے چیئرمین حنیف عباسی نے کہا ہے کہ رائیونڈ اڈہ پلاٹ پر ناک رگڑنے سے نہیں بلکہ ملک و قوم کی خدمت کرنے اور عوام کے دلوں کو جیتنے سے اقتدار ملتا ہے،عمران اور مودی ملاقات میں کیا انڈر سٹینڈنگ ہوئی قوم کو بتایا جائے؟۔ جمہوریت کو یرغمال بنانے والے لوگوں کو سیاست بدر کئے بغیر جمہوریت بے معنی ہے۔ بھارت پانی روک کر پاکستان کو صحرا بنانا چاہتا ہے۔ جنگ مسلط کی گئی تو پوری قوم پاک فوج کے ساتھ کھڑی ہو گی۔ اپوزیشن ملکی ترقی و استحکام کے راستے میں رکاوٹیں ڈالنے سے باز رہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز صادق آباد میں مرکزی انجمن تاجران راولپنڈی کے ترجمان اصغر خان کی طرف سے دیئے گئے استقبالیہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔جس میں مسلم لیگ راولپنڈی سٹی کے جنرل سیکریٹری حاجی پرویز خان،رکن صوبائی اسمبلی راجہ محمد حنیف،مسلم لیگی راہنما سجاد خان،سابق ایم پی اے ضیاء اللہ شاہ و تاجر تنظیموں کے نمائندوں نے بھی شرکت کی،تقریب سے خطاب کرتے ہوئے میٹرو بس کے چیئرمین حنیف عباسی نے مزید کہا کہ پاکستان کی سلامتی استحکام اور تحفظ کیلئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ بھارت میں علیحدگی کی 22تحریکیں سر گرم ہیں۔ بھارت کا شیرازہ بکھر رہا ہے۔ عہد حاضر کی صلیبی جنگوں کے مقابلہ کیلئے امت مسلمہ کا اتحا د ضروری ہے۔ دہشتگردوں کے نظریہ کو شکست دینے کیلئے مسلم لیگ (ن)کی حکومت نے بنیادی کردار ادا کیا۔ مودی سیاسی فائدے کیلئے پاکستان مخالف جذبات کو ہوا دے رہا ہے۔ بھارت مسئلہ کشمیر کا حل نہیں چاہتا۔ اقوام متحدہ پر 5ممالک کی اجارہ داری ہے ا س لئے مظلوم اور محکوم اقوام اقوام متحدہ سے مایوس ہو چکی ہیں۔ بھارت پاکستان کا پانی بند کرنے کی سازشیں کررہا ہے۔عمران خان اور شیخ رشیدانتشار پھیلانے کی علامت بن چکے ہے۔ قوم متحد ہے معمولی دھرنیوں اور جلسیوں سے ملک سیاسی عدم استحکام کا شکار نہیں ہوگا۔میٹرو بس کے چیئرمین حنیف عباسی نے کہا کہ ناعاقبت اندیش سیاسی کٹھ پتلیوں کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے جمہوریت اور ملکی سلامتی کو کوئی خطرہ ہوا تو قوم انہیں کبھی معاف نہیں کرے گی۔

Read more

گزشتہ شمارے

<< < September 2016 > >>
Sun Mon Tue Wed Thu Fri Sat
        1 2 3
4 5 6 7 8 9 10
11 12 13 14 15 16 17
18 19 21 22 23 24
25 26 27 28 29 30