Get Adobe Flash player

September 2016

29 September 2016

سعودی حکومت کیخلاف بل پر ویٹو امریکی کانگریس سے مسترد

 امریکی کانگریس نے سعودی حکومت کیخلاف بل پر صدر اوباما کا ویٹو مسترد کر دیا، اس سے قبل امریکی سینیٹ نے بھی صدر اوباما کے ویٹو کو مستر د کردیا تھا۔بل کے تحت نائن الیون حملوں میں مرنیوالوں کے لواحقین سعودی عرب کیخلاف معاوضے کیلیے مقدمہ درج کراسکیں گے۔ سعودی عرب پہلے ہی کہہ چکا ہے کہ اگر بل منظور ہوا تو سعودی عرب امریکا میں موجود اربوں ڈالر کے اثاثے فروخت کردے گا۔گزشتہ روز امریکی ایوان نمائندگان میں77 کے مقابلے میں348 ووٹوں سے اوباما کا ویٹو مسترد کیا گیا۔ قبل ازیں امریکی سینیٹ نے بھی غالب اکثریت کیساتھ صدر باراک اوباما کے متاثرین نائن الیون کو سعودی عرب پر مقدمہ کرنے کی اجازت دینے والے بل کو ویٹو کرنے کے اقدام مسترد کر دیا تھا۔

Read more

چین کا 2020میں فائیو جی نیٹ ورک متعارف کرانیکا اعلان

چین نے 2020میں فائیو جی کے نیٹ ورک کے کمرشل آپریشنز ملک بھر میں متعارف کرانے کا اعلان کیا ہے ۔ چینی وزارت صنعت وٹیکنالوجی کی جانب سے جمعرات کو جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ 2020میں فائیو جی نیٹ ورک متعارف کرانے کے ساتھ 2022اور2023میں بڑے پیمانے پر موبائل ایپلیکیشنز پر کام بھی مکمل ہو چکا ہو گا۔ چین نے فائیو جی نیٹ ورک کے حوالے سے دوسرے ممالک کی طرح تحقیقی کام کا آغاز بہت جلد کر دیا تھا ۔چینی حکومت نے 2013میں فائیو جی نیٹ ورک کی تشہیر کے لئے ایک گروپ بھی قائم کیا تھا جس نے رواں سال کے آغاز میں فائیو جی ٹیکنالوجی پر تجرباتی کام شروع کئے تھے جو کہ رواں مہینے میں کامیابی کے ساتھ مکمل کئے گئے ہیں ۔

Read more

افغان حکومت اور حزب اسلامی کے درمیان امن معاہدے پر دستخط

 افغان صدر اشرف غنی اور حزب اسلامی کے سربراہ گلبدین حکمت یار نے باضابطہ طور پر امن معاہدے پر دستخط کردیئے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امن معاہدے پر دستخط کی تقریب صدارتی محل میں منعقد ہوئی جس میں حزب اسلامی کے سربراہ گلبدین حکمت یار نے بذریعہ ویڈیو لنک معاہدے پر دستخط کئے جب کہ تقریب کو سرکاری ٹی وی پر براہ راست نشر کیا گیا،2001 میں طالبان کے اقتدار کے خاتمے کے بعد یہ پہلا معاہدہ ہے جس کے بعد حکومتی حلقوں میں امید ظاہر کی جارہی ہے کہ دیگر گروپوں سے بھی امن معاہدوں کو تقویت ملے گی، 25 نکاتی امن معاہدے کے تحت گلبدین حکمت یار اور ان کے ساتھیوں کو ماضی میں ہونے والی کارروائیوں پر استثنی حاصل ہوگا اور انہیں سیاست کرنے کا پورا اختیار حاصل ہوگا۔افغان صدر اشرف غنی کا کہنا تھا کہ حزب اسلامی کے ساتھ امن معاہدے کے بعد طالبان اور دیگر مسلح گروہوں کے پاس سنہری موقع ہے کہ وہ اپنے آئندہ کے فیصلے سے آگاہ کریں کہ وہ امن کے کارواں کا حصہ بننا چاہتے ہیں یا بے گناہ شہریوں کا خون بہانے کے لئے تصادم کی راہ اختیار کریں گے۔ انہوں نے گلبدین حکمت یار کا نام عالمی دہشت گردوں کی فہرست سے نکالے جانے پر امریکا اور اقوام متحدہ کا بھی شکریہ ادا کیا۔دوسری جانب گلبدین حکمت یار کا اپنے پیغام میں کہنا تھا کہ میں تمام فریقین سے کہوں گا کہ وہ امن معاہدے کی حمایت کریں اور خاص طور پر اپوزیشن جماعتیں حکومت کا ہاتھ مضبوط کرنے کے لئے امن معاہدے کا حصہ بنیں اور امن کی راہ پر چلتے ہوئے اپنے مقاصد حاصل کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمیں یقین ہے کہ ایک دن غیرملکی افواج کی ملک میں مداخلت کا خاتمہ ہوگا اور غیرملکی افواج کے انخلا کے بعد ملک میں امن ہوگا۔ادھر پاک افغان امور پر گہری نظر رکھنے والے ماہرین کا کہنا ہے کہ حزب اسلامی اور افغان حکومت کے درمیان امن معاہدے کے بعد کابل اور اسلام آباد کے درمیان دوریاں کم ہونے میں مدد ملے گی۔


Read more

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردوبدل کی سمری وزارت پٹرولیم کو ارسال

اوگرا کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں رد و بدل سے متعلق سمری وزارت پٹرولیم کو ارسال کر دی گئی ہے۔اوگرا نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں رد و بدل کی سمری وزارت پٹرولیم کو ارسال کر دی ہے جس کے مطابق، پٹرول کی قیمت میں 10 پیسے اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 1.81روپے اضافے کی تجویز ہے۔ ہائی اوکٹین کی قیمت میں 3.55 روپے جبکہ مٹی کے تیل کی قیمت میں 2.71 روپے فی لٹر اضافے کی سفارش کی گئی ہے۔ اوگرا کی جانب سے ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 28 پیسے کمی کرنے کی تجویز بھی دی گئی ہے۔ جہازوں میں استعمال ہونے والے ایندھن جی پی ون کی فی لٹر قیمت میں بھی 1.66 روپے اضافے کی تجویز دی گئی ہے۔ اوگرا کی جانب سے وزارت پٹرولیم کو بھیجی گئی سمری کی حتمی منظوری کل دی جائے گی۔

Read more

اوپیک کا تیل کی پیداوارکم کرنے کا اعلان

تیل برآمد کرنیوالی تنظیم اوپیک نے تیل کی پیداوار میں کمی کا معاہدہ کرلیا، اطلاق نومبر سے ہوگا۔اوپیک کے ممبرممالک کے درمیان ہونے والے معاہدے کے تحت تیل کی پیداوار32.5 ملین بیرل یومیہ تک محدود کی جائے گی جو اس وقت 33.24 ملین بیرل یومیہ تک پہنچ چکی ہے۔2008 کے بعد پہلی مرتبہ تیل کی پیداوارمیں کمی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ایرانی وزیرتیل کے مطابق ایران تیل کی پیداوارمیں 7لاکھ بیرل یومیہ کمی کردے گا۔اوپیک ڈیل کے بعد امریکی اوریورپی منڈیوں میں تیزی کا رجحان دیکھا گیا جبکہ خام تیل کی قمیتوں میں 6 فیصد تک اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔


Read more

کے الیکٹرک نرخ کیلئے عوامی سماعت، فیصلہ 15روز بعد آئیگا

نیپرا کی کراچی میں کے الیکٹرک کے آئندہ 10سالوں کے لئے نرخ کے تعین کی 2 روزہ عوامی سماعت ہوئی، فیصلہ 15 روز بعد آئے گا۔ نیپرا نے کہا ہے کہ نیا ٹیرف کے الیکٹرک کی کارکردگی کو دیکھتے ہوئے بنایا جائے ۔کراچی میں کے الیکٹرک کی ملٹی ٹیرف درخواست پر نیپرا حکام نے دو روزہ سماعت کا اہتمام کیا۔ سماعت میں شہریوں اور اسٹیک ہولڈرز کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔اس موقع پر کے الیکٹرک نے آئندہ 10 برس کا بزنس پلان پیش کیا، جس میں بجلی کی پیداوار4ہزار میگا واٹ بڑھانے اورڈسڑی بیوشن نیٹ ورک پر ایک سو آٹھ ارب روپے خرچ کیے جائیں گے۔کے الیکٹرک کی بریفنگ کے بعد عوامی موقف سنا گیا۔ جس میں کے الیکٹرک اور شہریوں کے درمیان تلخ کلامی بھی ہوئی ۔ صارفین نے شکایت نہ سنے جانے کی شکایت کی۔اس موقع پر ممبر نیپرا میجر ریٹائرڈ محمد ہارون نے کہا کہ کہ نیا ٹیرف کے الیکٹرک کی کارکردگی کو دیکھتے ہوئے بنایا جائے۔


Read more

تجارتی پالیسی کیلئے فنڈز کا اجرا شروع نہ ہوسکا، بجٹ کٹوتی کا امکان

وزارت خزانہ نے تجارتی پالیسی پر عمل درآمد کو یقینی بنانے کے لیے وزارت تجارت کو رواں سال کے لیے مختص 6ارب روپے کی رقم یکمشت دینے سے انکار کر دیا ہے، یہ رقم وزارت تجارت کو ہر 2 ماہ بعد دی جائے گی، رواں مالی سال تجارتی پالیسی کی مختص رقم پر کٹ لگنے کا امکان ہے۔وزارت تجارت کے حکام کے مطابق پاکستان کی برآمدات میں اضافے اور ملک میں تجارتی سرگرمیوں کے فروغ کے لیے اسٹریٹجک ٹریڈپالیسی فریم ورک 2015-18 کے لیے 20 ارب روپے مختص کیے گئے تھے اور طے پایا تھا کہ تجارتی پالیسی کے پہلے 2 سال 6، 6 ارب روپے اور تیسرے سال 8 ارب روپے وزارت تجارت کو فراہم کیے جائیں گے لیکن وزارت خزانہ نے گزشتہ مالی سال جو تجارتی پالیسی کا پہلا سال تھا کوئی رقم وزارت تجارت کو نہیں دی۔

Read more

پاکستان آم کی برآمد ایک لاکھ ٹن سے بھی بڑھنے کا امکان

آل پاکستان فروٹ اینڈ ویجیٹیبل ایکسپورٹرز امپورٹرز اینڈ مرچنٹس ایسوسی ایشن(پی ایف وی اے)کے چیئرمین وحید احمد نے کہا ہے کہ نام نہاد ماہرین کے غلط تبصروں کی وجہ سے ہارٹی کلچر کی تجارت بالخصوص پھل اور سبزیوں کی برآمدات کے شعبے کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے جس سے زراعت پیشہ آبادی کا بڑا طبقہ بھی متاثر ہوگا۔ایسوسی ایشن کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق رواں سیزن میں آم کی برآمد 1 لاکھ ٹن کے ہدف سے بھی زائد رہے گی اور اس حوالے سے آل کراچی انڈسٹریل الائنس کے صدر میاں زاہد حسین کی جانب سے ظاہر کیے گئے خدشات بے بنیاد اور معلومات کی کمی کا نتیجہ ہیں۔وحید احمد کے مطابق قرنطینہ ڈپارٹمنٹ 90ہزار ٹن سے زائد آم کی برآمد کے فائیٹو سینٹری سرٹیفکیٹ جاری کرچکا ہے، گزشتہ سال 68ہزار ٹن آم کی برآمد کے مقابلے میں رواں سال 30 سے 40ہزار ٹن زائد آم برآمد کیا جائے گا، پی ایف وی اے اور متعلقہ حکومتی ادارے ملک سے پھلوں اور سبزیوں کی برآمدات بڑھانے اور معیار کی بہتری کیلیے سرتوڑ کوششوں میں مصروف ہیں جن کے مثبت نتائج بھی سامنے آرہے ہیں تاہم میاں زاہد حسین اور دیگر نام نہاد ماہرین کے حقیقت کے برخلاف تبصروں اور تجزیوں کی وجہ سے ہارٹی کلچر کی تجارت، پھلوں اور سبزیوں کی برآمدات کے شعبے کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے جس سے زراعت پیشہ آبادی کا بڑا طبقہ بھی متاثر ہوگا۔


Read more

سینیٹ کمیٹی نے اسٹیٹ لائف کی نجکاری کا بل مسترد کردیا

 سینیٹ قائمہ کمیٹی تجارت نے اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن کی تنظیم نو (نجکاری)کا حکومتی بل مسترد کردیا جبکہ وزارت تجارت نے بھی کمیٹی کی طرف سے پیش کردہ سفارشات ماننے سے انکارکردیا۔اجلاس چیئرمین شبلی فرازکی صدارت میں ہوا، قائمہ کمیٹی نے اسٹیٹ لائف انشورنس کی تنظیم نوپراپنی سفارشات پیش کیں جس پروزارت تجارت حکام نے ایک بجے تک مہلت مانگی۔ قائمہ کمیٹی نے اپنی12سفارشات میں کہاکہ بل سے نجکاری کا لفظ نکال دیاجائے، حکومت کا اسٹیٹ لائف میں شیئرایک فیصد ہے اوراسی شیئرکا25 فیصد مارکیٹ میں لے جائیگی، ادارے کی ملکیت حکومت پاکستان کے پاس رہے گی اورورکرزکاحق محفوظ رہے گا۔مارکیٹ میں کوئی شخص 5 فیصد سے زائد شیئر نہیں خرید سکے گا، تمام اسٹاف اور افسران موجودہ شرائط پرٹرانسفر ہوںگے اورکسی ملازم کو نکالا نہیں جائے گا، پہلے تمام پالیسیز میں حکومت گارنٹی کرتی تھی، آئندہ بھی حکومت گارنٹی کرے گی۔ وقفے کے بعد اجلاس دوبارہ شروع ہوا تو وفاقی وزیر خرم دستگیرنے کہاکہ کمیٹی کی طرف سے پیش کردہ سفارشات سے تنظیم نو کا مقصد فیل ہوجاتا ہے، اس لیے اس پرغورکے لیے6ہفتے کاٹائم دیا جائے جس چیئرمین کمیٹی نے کہاکہ ہمیں30ستمبرتک بل ایوان میں پیش کرنا ہے۔


Read more

آئی ایم ایف نے پاکستان کے لئے قرض کی آخری قسط کی منظوری دیدی

پاکستان نے بین الاقوامی مالیاتی فنڈکے ساتھ پروگرام کامیابی کے ساتھ مکمل کرلیا ہے جس کے بعد پاکستان آئی ایم ایف سے آزاد ہوگیا ہے تاہم آرٹیکل فورکے تحت مشاورت اور جائزہ جاری رہے گا۔آئی ایم ایف کے ایگزیکٹو بورڈ نے پاکستان کے بارہویں اورآخری اقتصادی جائزہ کی منظوری دیتے ہوئے دس کروڑ20 لاکھ ڈالرکی آخری قسط جاری کرنے کی منظوری دیدی ہے۔ گزشتہ روزمنعقد ہونیوالے آئی ایم ایف ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں آئی ایم ایف جائزہ مشن اورپاکستان کی اقتصادی ٹیم کے درمیان 3 سالہ ایکسٹنڈڈ فنڈ فسیلیٹی پروگرام کے تحت بارہویں اورآخری اقتصادی جائزہ مذاکرات ہوئے جس میں اقتصادی جائزہ رپورٹ پیش کی گئی۔ایگزیکٹوبورڈ نے آئی ایم ایف جائزہ مشن کی پاکستان کے بارہویں اقتصادی جائزہ رپورٹ کا تفصیلی جائزہ لینے کے بعد منظوری دیدی ہے۔ پاکستان کو دس کروڑ بیس لاکھ ڈالرکی آخری قسط اگلے دودن میں منتقل ہوجائے گی۔ واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کی حکومت بننے کے بعد آئی ایم ایف نے تین سالہ ایکسٹنڈڈ فنڈ فسیلٹی پروگرام کے تحت 6.15 ارب ڈالرکے قرضے کی منظوری دی تھی جو پاکستان کو اقساط میں ملنا تھا اور ہر قسط کیلئے پاکستان کو آئی ایم ایف کی شرائط پورا کرنا تھیں۔

Read more

گزشتہ شمارے

<< < September 2016 > >>
Sun Mon Tue Wed Thu Fri Sat
        1 2 3
4 5 6 7 8 9 10
11 12 13 14 15 16 17
18 19 20 21 22 23 24
25 27 28 29 30