بعض عدالتی فیصلوں کے باعث اربوں روپے ہرجانہ اداکرنا پڑا، اٹارنی جنرل

اٹارنی جنرل آف پاکستان اشتر اوصاف کا کہنا ہے کہ بعض عدالتی فیصلے عالمی فورم پرلے جائے گئے جن کے باعث اربوں روپے ہرجانہ اداکرنا پڑا۔سپریم کورٹ میں نئے عدالتی سال کے موقع پر فل کورٹ ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اٹارنی جنرل اشتر اوصاف کا کہنا تھا کہ آج قائداعظم کی انہترویں برسی بھی ہے لہذا آج کے دن ہمیں محنت اورلگن سے کام کرنے کا عزم کرنا ہوگا۔ آئین عدلیہ، مقننہ اور انتظامیہ کے اختیارات کی حدبندی کرتا ہے،اٹارنی جنرل آف پاکستان نے مزید کہا کہ سیاسی مقدمات سپریم کورٹ میں لائے گئے اور فریقین کو اپیل کے حق کے بغیر چھوڑ دیاگیا جب کہ اس طرح کے مقدمات میں میڈیا کی اپنی ذمہ داری بھی ہوتی ہے، امید ہے میڈیا عدالتی نظام کے متوازی عوامی عدالتی نظام میں تبدیل نہیں ہوگا۔بعض عدالتی فیصلے عالمی فورم پرلے جائے گئے جن کے باعث اربوں روپے ہرجانہ ادا کرنا پڑا،ہمیں ایک دوسرے سے خیالات کا تبادلہ کرنا چاہیے، اس سے اداروں کی آزادی پر سمجھوتہ نہیں ہوتا بلکہ ایک دوسرے کوسمجھنے کاموقع مل سکتاہے۔