سپریم کورٹ نے کلثوم نواز کی نااہلی کی درخواستیں خارج کردیں

سپریم کورٹ نے نواز شریف کی اہلیہ اور این اے 120 کے ضمنی انتخاب کی فاتح بیگم کلثوم نواز کی نااہلی کیلئے دائر درخواستیں خارج کردیں۔سپریم کورٹ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ کلثوم نواز کی نااہلی کیلئے دائر درخواستیں خارج کردیں۔ وکیل درخواست گزار نے کہا کہ کلثوم نواز کے پاس بھی اقامہ ہے لیکن تنخواہ ظاہر نہیں کی گئی۔ جسٹس قاضی فائز عیسی نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ بتائیں کلثوم نواز نے کونسی گاڑی یا گھر چھپایا ہے۔جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ درخواست گزار پاناما کیس کا حوالہ دے رہا ہے جس میں اقامہ اور تنخواہ کا معاملہ تھا، درخواست گزار نے تین نکات اٹھائے لیکن ثابت نہیں کرسکا۔ جسٹس قاضی فائز عیسی نے کہا کہ کسی پر انگلی اٹھاتے ہیں تو اس کی بنیاد بھی ہونی چاہئے، کوئی پسند ہے یا نہیں اس کا فیصلہ عوام کو کرنا ہے، کیس بنانے کے لئے حقائق ہونے چاہئیں، اب کیس کو اندھا دھند تونہیں چلاسکتے، بتائیں کلثوم نواز نے کونسی گاڑی یاگھر چھپایا ہے۔واضح رہے کہ پیپلزپارٹی کے فیصل میر اور دیگر نے سپریم کورٹ میں لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف درخواستیں دائر کی تھیں جو واپس لینے کی بنیاد پر خارج کی گئیں۔