0

مریم نواز کونیب نے سوالات کیلئے بلایا اوروہ پوری بارات لیکرآگئیں، شبلی فراز

سلام آباد: وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ نیب نے مریم نواز کو زمین کی خریداری سے متعلق سوالات کے لیے بلایا اور وہ پوری بارات لے کر نیب آگئیں۔اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز کا کہنا تھا کہ جب ہمیں حکومت ملی توجاری مالیاتی خسارہ 20 ارب ڈالر تک پہنچ چکا تھا، 2 سال میں جاری مالیاتی خسارے میں 17 ارب ڈالر کی کمی کی گئی، وزیراعظم کی غیرضروری اخراجات روکنے کی پالیسی کامیاب رہی، برآمدات بڑھانیاورغیرضروری درآمدات میں کمی کی پالیسی اپنائی، زرمبادلہ کے ذخائر 8 ارب ڈالرسے بڑھ کر 12.5 ارب ڈالر تک پہنچ چکے ہیں، توقع تھی کہ مالیاتی خسارہ 9.1 فیصد رہے گا، اس وقت مالیاتی خسارہ 8.1 فیصد ہے۔شبلی فراز کا کہنا تھا کہ سخت لاک ڈان کا نعرہ لگانے والے اب نظر نہیں آرہے، سخت لاک ڈاون کا مطالبہ اشرافیہ کا تھا، جس طرح حکومت نے کورونا وبا سے نمٹا اس کی دنیا میں مثالیں دی جارہی ہیں، خوشی کی بات ہے کہ معیشت دوبارہ چلنا شروع ہوگئی ہے، معیشت میں بہتری سے اسٹاک ایکس چینج میں استحکام آرہاہے، ٹیکس محاصل ہدف سے300 ارب روپے زیادہ اکٹھے کیے گئے، احساس پروگرام کیتحت ایک کروڑ50لاکھ خاندانوں تک مالی امدادپہنچائی گئی، مہنگائی ہوئی ہے لیکن اشیائیضروریہ کی قلت نہیں ہوئی، غریب لوگوں کو کم از کم قیمت پراشیا کی فراہمی ترجیح ہے۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ مریم نوازکہتی تھیں میری پاکستان توکیا لندن میں بھی جائیداد نہیں، انہیں نیب نے آج زمین کی خریداری سے متعلق سوالات کے لیے بلایا تو وہ پوری بارات لیکر آگئیں، انہیں اپنے کیے پرنادم ہونا چاہیے، ان لوگوں نے اداروں کو تباہ کردیا ہے، ان کے والد لندن چلے گئے اور آرام سے زندگی گزار رہے ہیں، یہ کیسی لیڈرشپ جو لندن میں آرام کررہی ہے، لیڈر وہ ہوتا ہے جس کا سب کچھ اپنے ملک میں ہو، ہم نیاس کلچرکو شکست دینی ہے، ہم نے ہر شعبہ میں اصلاحات لانی ہیں، ان کا مقصد لوٹی ہوئی دولت بچانا ہے، مسلم لیگ (ن) کو لوٹ مارکا جواب دینا ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں