0

نواز شریف کا بیانیہ ملک دشمنوں سے مل رہا ہے، وفاقی وزرا

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے نواز شریف کی تقریر پر ردعمل میں کہا ہے کہ ان کا بیانیہ ملک دشمنوں سے مل رہا ہے۔وفاقی وزرا شبلی فراز، اسد عمر، شاہ محمود اور فواد چودھری نے اپوزیشن کی اے پی سی اور نواز شریف کی لندن سے تقریر پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے حکومتی ردعمل پیش کیا۔شبلی فرازوزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا کہ وزیراعظم کے حکم پر اپوزیشن رہنماں کے خطاب کو ٹی وی پر نشر ہونے سے نہ روکا گیا، مولانا فضل الرحمان کی تقریر بھی اے پی سی کی میزبان پیپلزپارٹی کی جانب سے روکی گئی، اپوزیشن نے 2018 کے الیکشن کو دھاندلی زدہ الیکشن قرار دینے کی کوشش کی، تو کیا نواز شریف جن تین بار وزیراعظم منتخب ہوئے وہ الیکشن ٹھیک تھے؟ ان کو صاف شفاف الیکشن کی عادت نہیں، اس لیے وہ سیخ پا ہیں، 2018 میں 16 ایسے حلقے تھے جس میں پی ٹی آئی امیدوار 3 ہزار سے کم مارجن سے ہارے، اگر الیکشن صاف نہیں تھے تو ہماری ان 16 نشستوں پر کیوں کسی نے مدد نہیں کی۔شبلی فراز نے کہا کہ نواز شریف کی سوچ ہے کہ عدالت انکے حق میں فیصلہ دے تو ٹھیک ہے، خلاف دے تو غلط ہے، حقائق جانتے ہوئے چیزوں کو متنازع بنا کر وہ ملک و جمہوریت کی خدمت نہیں کررہے۔اسد عمروفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا تھا کہ حکومت اور فوج نے فاٹا، کراچی اور بلوچستان میں امن قائم کیا، افغانستان میں بھی امن کی امید نظر آرہی ہے، دشمنوں کو پتا ہے پاکستان ان مشکلات سے نکل گیا تو پاکستان کو روکنا مشکل ہوجائے گا، یہ کامیابیاں اس لیے حاصل ہورہی ہیں فوج اور سول لیڈرشپ ایک دوسرے کو شک کی نگاہ سے دیکھنے کے بجائے ملکر کام کررہے ہیں۔اسد عمر نے کہا کہ نواز شریف فوج پر حملہ کررہے ہیں ، انکا بیانیہ ملک دشمنوں سے مل رہا ہے، جو ادارہ میاں صاحب کے تابع نہیں انکا اسکے خلاف اعلان جنگ ہے، ایک مجرم کو انسانی ہمدردی کی بنیاد پر بیرون ملک بھیجا گیا، نواز شریف جب جہاز میں بیٹھے تو پتا چل گیا تھا کتنے بیمار ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں