0

بھارتی شخص نے تنہا 30 برس میں پانی کی نہر کھود ڈالی

بہار: دنیا بھر میں عزم وہمت کی داستانیں موجود ہیں اور اب بہار کے ضلع گایا کے گاں کوٹھی لاوا کے ایک باہمت نے بہتی نہر کا راستہ موڑا، ایک نیا راستہ بنایا اور اپنے علاقے کو سیراب کیا ہے۔لونگی بھویان نے مسلسل 30 سال تک تنِ تنہا یہ نہر (کینال) کھودی ہے کیونکہ اس کا علاقہ پانی سے محروم تھا۔ قریبی پہاڑیوں پر گرنے والا برساتی پانی مختلف راہ سے دریا میں گرتا تھا۔ دھیرے دھیرے لوگ علاقہ چھوڑنے لگے لیکن 30 برس سے لونگی بھویان اکیلے ہاتھ سے نہر بنارہے ہیں۔ اس نہر کی چوڑائی 4 فٹ، گہرائی 3 فٹ اور لمبائی 4 کلومیٹر سے بھی زیادہ ہے۔ اس مشقت میں کسی نے بھی لونگی کی مدد نہیں کی اور اس نے اکیلے ہاتھوں سے یہ کام کیا ہے۔میں گزشتہ 30 برس میں ہر روز جنگل میں جاتا ہوں ۔ وہاں اپنے مویشی چرانے کے لئے چھوڑتا ہوں اور بیلچے اور پھاڑے سے نہر کا راستہ بنارہا ہوں۔ اس دوران گاں کے کئی لوگ علاقہ چھوڑ کر شہر جابسے ہیں، لونگی نے بتایا۔یہ گاں گھنے جنگلات میں گھرا ہے اور بارش کا پانی مختلف راہ سے دریا میں گرتارہتا ہے۔ تاہم اب لونگی نے اس کا رخ موڑ کر پانی کو دیہات کے قریب پہنچایا ہے جہاں اب ایک چھوٹا سا تالاب بن چکا ہے۔ اس پانی سے جانور سیراور کھیت سیراب ہوتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں