0

بورڈ نے فرنچائزز کو پھر سبز باغ دکھا کر بہلا دیا


کراچی: پی سی بی نے پی ایس ایل فرنچائزز کو پھر سبز باغ دکھا کر بہلا دیا۔بھاری سرمایہ کاری کے باوجود مسلسل خسارے میں جانے والی پی ایس ایل فرنچائزز نے اپنے تحفظات نظر انداز کیے جانے پر لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کیا تھا،مگر پھرپی سی بی کی طرف سے مسائل مل بیٹھ کر حل کرنے کی یقین دہانی پر درخواست واپس لے لی۔گذشتہ روزبورڈ حکام اور پی ایس ایل فرنچائز مالکان کی میٹنگ کا انعقاد ہوا،ذرائع نے بتایا کہ مجموعی طور پر ماحول خوشگوار رہا مگر فرنچائزز کو کوئی ٹھوس یقین دہانی کرانے سے گریز کیاگیا، بورڈ کے چیف فنانشل آفیسر جاوید مرتضی نے معاملات پر پریزنٹیشن دی۔ٹیم مالکان سے کہا گیا کہ تمام معاہدوں میں ان کا حصہ90 فیصد کر دیا جائے گا،ابھی فرنچائزز کو ٹی وی براڈ کاسٹ کی پاکستان اور بیرون ملک ڈیل کا95 فیصد ملتا ہے، مگر پروڈکشن کی 95 فیصد رقم بھی انہی کو دینا پڑتی ہے، براڈ کاسٹنگ ریونیو سے 80 فیصد رقم ہاتھ آتی ہے، ٹائٹل و دیگر اسپانسر شپ کا 60 فیصد حصہ فرنچائزز کا ہوتا ہے، گیٹ منی کی 70 فیصد رقم ان کو دی جاتی ہے۔بورڈ حکام نے گذشتہ روز کی میٹنگ میں ٹیموں سے کہا کہ آئندہ ہوم اینڈ اوے کی بنیاد پر میچز ہوں گے۔ ٹکٹوں کی فروخت سے ملنے والی مکمل آمدنی آپ کی ہو گی، ڈالر کا موجودہ ریٹ 164 اگلے 5 سال کیلیے مقرر کر دیتے ہیں اس سے آپ کو ایک ارب روپے کی بچت ہوگی، اس موقع پر فرنچائزز کی جانب سے نئے معاہدوں کی تجویز دی گئی جس پر جواب ملا کہ ہم نے بھی ایسا سوچا تھا مگر قانونی طور پر یہ ممکن نہ ہوگا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں