0

موٹرے وے زیادتی کیس کا مرکزی ملزم عابد گرفتار

لاہور: موٹر وے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد ملہی کو فیصل آباد سے گرفتار کرلیا گیا۔ موٹر وے پر خاتون سے زیادتی کے مرتکب دو ملزمان میں سے ملزم شفقت کے بعد اب مرکزی ملزم عابد ملہی کو واقعے کے 33 دن بعد گرفتار کرلیا گیا۔ پولیس کے مطابق ملزم کو فیصل آباد کے علاقے مانگا منڈی سے گرفتار کیا گیا جسے لاہور منتقل کیا جارہا ہے۔پنجاب حکومت کے ترجمان شہباز گل نے ملزم کی گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے اپنی ٹویٹ میں کہا ہے کہ ملزم کو قانون کے مطابق سزا ملے گی۔موٹر وے پر خاتون سے زیادتی کا معاملہ ہائی پروفائل کیس بننے کے بعد سے عابد اپنے گھر سے فرار تھا اور چھلاوہ بن گیا تھا۔ پولیس نے ملزم کی بیوی، کئی عزیزوں اور دوستوں کو بھی گرفتار کیا اور ہر طرح کی معلومات حاصل کیں تاہم ملزم کسی طور ہاتھ نہ آیا۔ ملزم کی گرفتاری کے لیے خفیہ اطلاعات پر پولیس نے چار بار چھاپے مارے تاہم ہر بار وہ چھاپے سے کچھ دیر قبل فرار ہوجاتا تھا۔پنجاب پولیس نے عابد کو موسٹ وانٹڈ ملزم قرار دیتے ہوئے اس کی گرفتاری پر 25 لاکھ روپے انعام مقرر کر رکھا تھا جب کہ پنجاب بھر میں مختلف سیکیورٹی اداروں کی متعدد ٹیموں اور اہل کاروں کو ملزم کی گرفتاری کا ٹاسک دیا ہوا تھا۔پنجاب پولیس نے ملزم کے گرد گھیرا تنگ کرنے کے لیے اس کا نام بلیک لسٹ میں شامل کرتے ہوئے اطلاع ملک بھر کے ایئرپورٹس اور بارڈر تک پہنچائی گئی تاکہ ملزم کسی بھی طرح ملک سے باہر نہ جاسکے۔پولیس نے عابد ملہی کا شناختی کارڈ بلاک کیا، ملزم کے سات مختلف خاکے جاری کیے تاکہ وہ بہروپ بدلنے پر بھی پہچانا جاسکے تاکہ کورونا وائرس کی وبا کے سبب ماسک پہننے کے باعث ہر بار ملزم کو بچ نکلنے میں آسانی ہوئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں