0

پاکستان نے کرتار پور راہداری سے متعلق بھارتی پروپیگنڈا مسترد کر دیا

اسلام آباد: پاکستان نے کرتار پور سے متعلق بھارتی پروپیگنڈا بے بنیاد اور غلط قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا۔ترجمان دفترخارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے کہا ہے کہ کرتار پور کے خلاف بھارتی حکومت کا پروپیگنڈا پاکستان سکھ گوردوارہ پربندھک کمیٹی بھی مسترد کر چکی ہے، بھارتی حکومت کا بدنیتی پر مبنی پروپیگنڈے کا مقصد اس امن راہداری کو بدنام کرنا اور سکھ برادری کے مفادات کے خلاف شر پسندانہ اقدام کے متراف ہے۔ترجمان کا کہنا تھا کہ بھارتی حکومت اس بد نیتی پر مبنی پروپیگنڈا کے زریعہ بھارت میں اقلیتوں کے خلاف انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے توجہ ہٹانا ہے، پاکستان سکھ گوردوارہ پربندہک کمیٹی ہی کردوارہ صاحب اور کرتار پور میں مذہبی رسومات کے انجام دہی کی ذمہ دار ہے، محکمہ وقف املاک کے تحت پروجیکٹ میجمنٹ یونٹ کو تشکیل پاکستان سکھ گوردوارہ پربندہک کمیٹی کی سہولت کاری کے لیے کی گئی ہے۔ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ گوردوارہ دربار صاحب کرتارپور کے معاملات کی پاکستان سکھ گوردوارہ پربندہک کمیٹی سے پروجیکٹ مینجمٹ یونٹ منتقلی کے اشارے حقائق سے منافی ہیں ان کا دوسرا مقصد بھارت میں ہندوتوا کے تحت کام کرنے والی حکومت کی جانب سے مذہبی انتشار کا فروغ ہیدنیا بھر سے سکھ برادری کرتارپور راہداری منصوبے کے ریکارڈ مدت میں مکمل کرنے اور سکھ یاتریوں کے لیے بہترین انتظامات و سہولت کاری پر بھی پاکستان کی معترف ہیبھارت کو سمجھاتے ہیں کہ گمراہ کن پروپیگنڈے کی بجاے اپنی اقلیتوں , ان کی عبادت گاہوں محفوظ بنانے کے لیے اقدامات کرے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں