0

لاپتہ افراد کی عدم بازیابی حکومتی نااہلی اور ریاستی ناکامی ہے، اسلام آباد ہائیکورٹ


اسلام آباد ہائی کورٹ نے ریمارکس دیے ہیں کہ لاپتہ افراد کی عدم بازیابی حکومت کی نااہلی اور ریاست کی ناکامی ہے جبکہ تمام سیکورٹی ایجنسیاں شہریوں کی حفاظت میں ناکام ہوگئی ہیں۔ہائی کورٹ میں عدالتی احکامات پر عملدرآمد نہ ہونے پر اعلی افسران کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ عدالت نے لاپتہ شہری عمر عبداللہ کی بازیابی کیلئے آخری مہلت دے دی۔جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ مغوی پیش نہ ہوا تو متعلقہ افسران تیاری کر کے آئیں جیل بھیجوں گا۔ عدالت نے اغوا کے وقت کے سیکرٹری داخلہ، دفاع اور آئی جی کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا۔دوران سماعت ایس ایس پی انویسٹی گیشن ملک نعیم اقبال اور اس وقت کے تفتیشی افسر گلفام وڑائچ، اسٹیٹ کونسل ایڈووکیٹ حسنین حیدر تھیہم عدالت میں پیش ہوئے۔جسٹس محسن اختر کیانی نے سخت اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ آپ لوگوں نے صرف وردیاں پہنی ہے، کام کسی نے نہیں کرنا، ریاست غیر قانونی کاموں سے ملک کی خدمت نہ کرے، مقدمہ چھ سال سے درج ہے ، اب کیا اسٹیٹس ہے ؟۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں