0

نوزائیدہ بچوں میں دل کے امراض کی جینیاتی وجہ دریافت


نیویارک: دنیا میں آنکھ کھولنے والے بچوں کی بڑی تعداد پیدائشی طور پر کسی نہ کسی نوعیت کیعارضہ قلب کے شکار ہوتی ہیں۔ اب ایک جین کا انکشاف ہوا ہے جس میں خرابی اس کی بڑی وجہ ہوسکتی ہے۔فاسفولائپیز ڈی ون (مختصرا پی ایل ڈی ون) ایک اہم جین ہے جس میں خرابی یا متاثر ہونے سے دل کے دائیں جانب موجود والوو متاثر ہوتا ہے اور بچوں میں ایک طرح کا مرض پیدا ہوجاتا ہے جسینیونیٹل کارڈیو میوپیتھی کہتے ہیں۔جرنل آف کلینکل انویسٹی گیشن کے مطابق بچوں میں پیدائشی طور پر جتنے نقائص ہوتے ہیں، ان میں 33 فیصد کا تعلق قلبی خرابیوں سے ہوتا ہے۔ ان میں دل کے خانے یعنی والوو کی خرابی سرِفہرست ہوتی ہے۔اسٹونی بروک یونیورسٹی کے رینے ساں اسکول کے پروفیسر مائیکل فرومان اور ان کے ساتھی گزشتہ 25 برس سے پی ایل ڈی ون پر تحقیق اور اس کی کلوننگ کررہے ہیں۔ اب انہوں نے معلوم کیا ہے کہ اگر اس جین میں کوئی خرابی ہوجائے تو اس کے ساتھ پیدا ہونے والے بچوں کا دل اور اس کے والوو متاثر ہوسکتے ہیں۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں