0

کووڈ 19 کی برطانوی قسم موجودہ ویکسین کی افادیت کم کرسکتی ہے، پاکستانی تحقیق


کراچی: پاکستانی ماہرین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ کووِڈ 19 کی حالیہ عالمی وبا کا باعث بننے والے سارس کوو ٹو وائرس کی تبدیل شدہ برطانوی قسم شاید پاکستان میں بھی کورونا وبا کی تیسری لہر کے بعد اس کے تیز رفتار پھیلا کی وجہ بن رہی ہے۔دوسری جانب بعض دیگر تحقیقات سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ برطانیہ سے پھوٹنے والا وائرس، جسے SARS-CoV-2/B.1.1.7 یا مختصرا B.1.1.7 کا نام بھی دیا گیا ہے، ہماری موجودہ ویکسینز کی افادیت کو کم کرسکتا ہے۔واضح رہے کہ اس سال فروری کے آخری ہفتے میں حکومتِ پاکستان ملک میں وائرس کی برطانوی قسم کا اعتراف کرتے ہوئے کہہ چکی ہے کہ سب سے پہلے چینی شہر ووہان میں نمودار ہونے والے سارس کوو ٹو کے مقابلے میں اس کی نئی اور تبدیل شدہ قسم B.1.1.7 قدرے تیزی سے پھیل سکتی ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں