0

بغیر سرجری ہاتھوں پر اضافی انگوٹھا لگانے کا کامیاب تجربہ


لندن: اگر آپ کا دل چاہتا تو اب اپنے ایک یا دونوں ہاتھوں پر کم خرچ اور برق رفتار اضافی انگوٹھا پہن سکتے ہیں جس کے لیے کسی سرجری کی ضرورت بھی نہیں۔اضافی روبوٹک انگوٹھے کو کنٹرول کرنے کے لیے پیر کے انگوٹھے اور کلائی پر خاص قسم کے سینسر لگائے گئے تھے جو وائرلیس رابطے کی بدولت انگوٹھے کو عین حقیقی عضو کی طرح ہی حرکت میں لاتے ہیں۔ اگرچہ یہ برائے فروخت نہیں کیونکہ اس کا مقصد اضافی انگوٹھے کے انسانی دماغ پر اثرات کا جائزہ لینا ہے۔یونیورسٹی کالج لندن کے ڈینیئل کلوڈ اور ان کے ساتھیوں نے 36 رضا کاروں کو مصنوعی انگوٹھا لگایا جو کلائی پر پٹے کی صورت میں باندھا گیا تھا اور مشینی انگوٹھا چھوٹی انگلی کے ساتھ حقیقی انگوٹھے کی مخالف سمت نصب کیا گیا تھا۔جن افراد کو انگوٹھا پہنایا گیا تھا وہ سیدھے ہاتھ والے تھے اور انہوں نے اسی ہاتھ پر پہنا جسے وہ زیادہ استعمال کرتے تھے۔ پانچ روز تک شرکا کو تجربہ گاہ اور حقیقی صورتحال میں مشینی انگوٹھے کا استعمال کرایا گیا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں