0

ن لیگ کے غلط فیصلوں سے ملکی معیشت کو 20 ارب ڈالر کا نقصان ہوا، وزیر خزانہ


اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کا کہنا ہے کہ (ن) لیگ کے غلط فیصلوں سے ملکی معیشت کو 20 ارب ڈالر کا نقصان ہوا اور روپیہ کے قدر کو مصنوعی طریقہ سے روکنے سے تاریخی کرنٹ اکانٹ خسارہ ہوا۔ اسلام آباد میں وزیر توانائی اور معاون خصوصی خزانہ کے ہمراہ ورچوئل پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیرخزانہ شوکت ترین نے مسلم لیگ (ن) کے پری بجٹ سیمینار پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ (ن) نے پریس کانفرنس کی کہ جی ڈی پی گروتھ 3.7 سے 5.8 فیصد ہوئی، ہمیں دیکھنا ہوگا کہ (ن) لیگ کے دور میں معیشت کس بنیاد پر بہتر ہوئی۔وزیر خزانہ نے کہا کہ (ن) لیگ نے طلب قرضوں سے پیدا کی، اس میں سرمایہ کاری میں کوئی اضافہ نہیں ہوا، سرمایے میں 2 یا ڈھائی فیصد اضافہ ہوا اور انہوں نے قرض لے کر بہتری دکھائی اورمعیشت کو ہیٹ اپ کردیا، مسلم لیگ کے دور میں گروتھ میں اضافہ قرض لینے سے ہوا۔شوکت ترین کا کہنا تھا کہ سب کو معلوم ہے کہ انہوں نے مصنوعی طریقے سے روپے کو مضبوط یا پھر اوور ویلیو رکھا، روپیہ کے قدر کو مصنوعی طریقہ سے روکنے سے تاریخی کرنٹ اکانٹ خسارہ ہوا، اسحاق ڈار نے معیشت کے ساتھ جو گیا وہ سب نے دیکھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں