0

خون کو سونگھ کر سرطان کی شناخت کرنے والا مثر نظام


پنسلوانیا: سرطان کو پکڑنے کے لیے ایک اچھی خبر یہ ہے کہ اب خون کے نمونوں سے بخارات بن کر اڑنے والے کیمیکلز کی شناخت کرنے والا ایک ایسا نظام تیار کیا گیا ہے جو خاتون کے بیضوں، لبلبے اور دیگر اعضا میں کینسر کی شناخت کرسکتا ہے۔ اس ضمن میں جدید حساس سینسر، مشینی اکتساب (لرننگ) اور مصنوعی ذہانت (آرٹیفیشل انٹیلیجینس) کے ملاپ سے پورا نظام بنایا گیا ہے۔ یہ خون سے اڑنے والے (طیران پذیر بخارات) یا وی او سی کو سونگھتا ہے اور ان میں مشکوک کیمیکل کا اندازہ لگاتے ہوئے سرطان کی شناخت کرسکتا ہے۔یونیورسٹی آف پینسلوانیا کے اے ٹی چارلی جانسن نے اس کے ابتدائی تجربات کو بہت حوصلہ افزا قرار دیا ہے۔ اس کی بدولت کینسر کے ابتدائی اور بڑھے ہوئے درجات کو نوٹ کرنا ممکن ہے۔ اگر مزید طبی (کلینکل) آزمائش سے شواہد ملتے ہیں تو جلد ہی ہم خون کے نمونوں کو سونگھ کر سرطان کی شناخت کے قابل ہوسکیں گے اور یہ عمل کسی انقلاب سے کم نہ ہوگا۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں