0

سندھ کا 1477 ارب کا بجٹ پیش، تنخواہوں میں 20 اور پنشن میں 10 فیصد اضافہ


کراچی: وزیر اعلی سندھ نے رواں مالی سال کے لیے سندھ کا 1477 ارب کا خسارے کا بجٹ پیش کردیا جس میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا گیا، سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 20 فیصد اور پنشن میں 10 فیصد اضافہ کیا گیا ہے جب کہ کم از کم اجرت 25 ہزار روپے مقرر کردی گئی ہے۔اسپیکر آغا سراج درانی کی زیر صدارت سندھ اسمبلی کا اجلاس ہوا۔ اپوزیشن اور حکومتی ارکان کی جانب سے شدید نعرے بازی اور شور شرابے کے دوران وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے آئندہ مالی سال کا بجٹ پیش کیا۔ بجٹ پیش کیے جانے کے دوران پیپلز پارٹی کے اراکین نے وزیراعلی سندھ کو اپنے حفاظتی گھیرے لیے رکھا۔سالانہ ترقیاتی بجٹ آئندہ مالی سال کا ترقیاتی بجٹ 3 کھرب 29 ارب روپے رکھا گیا ہے۔ سالانہ ترقیاتی پروگرامز کے لیے 2 کھرب 22 ارب 50 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں۔ غیر ملکی امداد سے چلنے والے منصوبوں کے لیے 71 ارب 16 کروڑ روپے جبکہ وفاقی امداد سے چلنے والے منصوبوں کے لیے صرف 5 ارب 37 کروڑ روپے مختص ہیں۔ بجٹ میں اضلاع کے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے لیے 30 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں