0

سندھ میں بحران شدید، مقامی صنعتوں کوگیس کی فراہمی بند کرنے کا حکم


کراچی: سندھ میں گیس کی قلت شدت اختیار کرگئی سوئی سدرن گیس کمپنی نے سی این جی اسٹیشنز کی طویل بندش کے بعد مقامی مارکیٹ کے لیے مصنوعات بنانے والی صنعتوں کو بھی گیس کی فراہمی معطل کردی جبکہ گیس سے بجلی بنانے والی صنعتوں (کیپٹیو پاور یونٹس) کس گیس کی فراہمی 50 فیصد کم کردی گئی۔گیس کی قلت کے حوالے سے ایس ایس جی سی نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ کمپنی کو اس وقت گیس کی اشد کمی کا سامنا ہے، گیس فیلڈ سے لگ بھگ 200 سے 250 ایم ایم سی ایف ڈی کم مل رہی ہے کیوں کہ گیس سپلای کرنے والی ایک بڑی گیس فیلڈ کنڑ پساکھی ڈیپ گیس فیلڈ سالانہ مرمت کی سبب 21 دن کے لیے بند ہوگی ہے۔ایس ایس جی سی نے کہا ہے کہ گیس کم موصول ہونے کے باوجود ہرممکن کوشش کی جا رہی ہے کہ صارفین کم سے کم تکلیف دی جائے اور جہاں جہاں گیس پہچای جا سکتی ہے وہاں گیس کی ترسیل ممکن بنای جا سکے۔ کیوں کہ تمام اسٹیک ہولڈرز کو گیس پہنچانا سوی سدرن کی ذمہ داری ہے، مگر اس گیس کی قلت کی سبب گھریلو صارفین کو گیس پہچانے میں انتہای دشواری کا سامنا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں