0

انسانی پیٹ میں ہزاروں نئے جراثیم خور وائرسوں کی دریافت


میری لینڈ: امریکی سائنسدانوں نے بڑے پیمانے پر جینیاتی تحقیق کے بعد انسانی پیٹ میں پائے جانے والے، ایسے تقریبا 50 ہزار نئے وائرس دریافت کرلیے ہیں جو جرثوموں (بیکٹیریا) پر حملہ آور ہوکر انہیں متاثر کرتے ہیں اور بعض اوقات انہیں موت کے گھاٹ بھی اتار دیتے ہیں۔بتاتے چلیں کہ جراثیم (بیکٹیریا) کو متاثر کرنے والے وائرسوں کو سائنسی زبان میں بیکٹیریوفیج وائرس (جراثیم خور وائرس) یا صرف فیج (phage) بھی کہا جاتا ہے۔یہ دریافت گزشتہ کئی سال کے دوران انسانی فضلے سے حاصل شدہ وائرسوں کے جینیاتی مطالعات سے استفادہ کرنے کے بعد ممکن ہوئی ہے۔اس تحقیق میں وائرسوں کے تقریبا ایک لاکھ 90 ہزار جینومز کا تجزیہ کرنے کے بعد ان میں 54 ہزار سے زیادہ ایسے وائرس سامنے آئے جو ممکنہ طور پر فیج قسم سے تعلق رکھتے ہیں۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں