0

پہلے خلائی واشنگ پاڈر کی آزمائش 2022 میں شروع ہوگی


ہیوسٹن: امریکی خلائی تحقیقی ادارے ناسا اور اشیائے صرف بنانے والی مشہور بین الاقوامی کمپنی پراکٹر اینڈ گیمبل (پی اینڈ جی) نے ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں جس کے مطابق دنیا کے پہلے خلائی واشنگ پاڈر کی آزمائش اگلے سال سے عالمی خلائی اسٹیشن (آئی ایس ایس) میں شروع کی جائے گی۔واضح رہے کہ خلائی اسٹیشن کے بے وزن (weightless) ماحول میں بیشتر ایسے کام انتہائی مشکل بن جاتے ہیں جو زمین پر ہمارے لیے روزمرہ کا معمول ہیں، جیسے کہ کھانا پینا، غذا ہضم کرنا اور نہانا دھونا وغیرہ۔ایسا ہی ایک عام کام کپڑوں کی دھلائی ہے جو کئی باتوں کی وجہ سے آج تک خلائی اسٹیشن میں ممکن نہیں ہوسکا۔ نتیجہ یہ ہے کہ خلائی اسٹیشن میں رہنے والے خلانورد (خلاباز) آج بھی اپنے استعمال شدہ، بدبودار کپڑے دھونے کے بجائے انہیں خاص کمرے میں بند کرنے پر مجبور ہیں۔سال میں دو سے تین بار ایک خصوصی کارگو کیپسول خلائی اسٹیشن تک پہنچ کر اس سے جڑ جاتا ہے۔ اس میں موجود تازہ سامانِ رسد خلائی اسٹیشن میں منتقل کردیا جاتا ہے جبکہ، گندے کپڑوں سمیت، خلائی اسٹیشن کا تمام کچرا اس کارگو کیپسول میں پہنچا دیا جاتا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں