0

حرام مغز میں پھیلنے والا پیوند جو کمر کے درد کو دور کرسکتا ہے


کیمبرج: کمرکے دیرینہ اور شدید درد کے شکار افراد کی زندگی بہت مشکل ہوجاتی ہے لیکن اب ریڑھ کی ہڈی میں لگائے جانے والے ایک پیوند کی بدولت اس کمرکا ناقابلِ برداشت درد کو بہت حد تک ختم کیا جاسکتا ہے۔یونیورسٹی آف کیمبرج سیوابستہ ڈیمیانو بیرن کہتی ہیں کہ حرام مغز اور ریڑھ کی ہڈی کے اعصاب میں برقی تحریک دے کر درد کم کرنے کا تصور ایک عرصے سے موجود ہے۔ لیکن کچھ عملی مسائل کی وجہ سے اس کا استعمال ممکن نہ تھا۔ اسی لیے ضروری ہے کہ اس میں کم سے کم 32 الیکٹروڈ (برقیرے) لگائے جائیں۔اس سے قبل ایک 12 ملی میٹر چوڑا ایک پیوند(امپلانٹ) بنایا گیا تھا ۔ لیکن اس کے لیے بہت پیچیدہ جراحی کی ضرورت تھی اور مریض کو بے ہوش کرنا پڑتا تھا۔ پھر حرام مغز کے کچھ حصے کو ہٹانے کی بھی ضرورت پیش آتی تھی۔ لیکن جامعہ کیمبرج کے نئے امید افزا ڈیزائن سے ان مسائل کو کچھ کم کیا گیا ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں