0

کیا شدید ڈائٹنگ ہماری صحت کیلیے شدید نقصان دہ ہے؟


کیلیفورنیا: جرمن اور امریکی سائنسدانوں کی مشترکہ تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ جو لوگ موٹاپا کرنے کیلیے بہت کم کھاتے ہیں ان کے پیٹ میں نقصان دہ جراثیم کی تعداد بڑھ جاتی ہے۔کئی مہینوں تک جاری رہنے والی اس تحقیق کے پہلے مرحلے میں 80 خواتین رضاکار شریک کی گئی جو موٹاپے میں مبتلا تھیں، جن میں سے نصف کو روزانہ صرف 800 حراروں (کیلوریز) والی غذا 16 ہفتوں تک کھلائی گئی۔
باقی نصف خواتین نے معمول کے مطابق کھانا پینا جاری رکھا، یعنی روزانہ 2000 کیلوریز لیں۔مطالعے کے اختتام پر معلوم ہوا کہ معمول کے مطابق اپنی غذا جاری رکھنے والی خواتین کے وزن میں کمی نہیں ہوئی، جیسا کہ توقع تھی۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں