0

اسمارٹ فون چھیننے پر بچہ اپنے باپ کی شکایت لیکر تھانے پہنچ گیا


شنگھائی: مشرقی چین کے صوبے انشوئی میں مانشان شہر کے ایک 14 سالہ بچے نے اپنے باپ پر الزام لگایا ہے کہ وہ بچوں سے مشقت لینے کے قوانین (چائلڈ لیبر لاز) کی خلاف کرتے ہوئے اس سے گھر کے کام کروا رہا ہے۔چائنیز سوشل میڈیا پر کچھ روز پہلے وائرل ہونے اس واقعے کی تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ مانشان شہر کا یہ 14 سالہ بچہ ہر وقت اپنے اسمارٹ فون میں مگن رہتا تھا جس کی وجہ سے نہ تو گھر کے کسی کام میں ہاتھ بٹاتا اور نہ ہی اپنی پڑھائی پر توجہ دیتا تھا۔جب یہ لڑکا اپنے بڑوں کے سمجھانے پر بھی باز نہ آیا تو اس کے والد نے حکم دیا کہ وہ اپنا اسمارٹ فون ایک طرف رکھ دے اور گھر کے کاموں میں مدد کرے۔اس حکم پر لڑکے کو اتنا شدید غصہ آیا کہ وہ باپ سے نظر بچا کر قریبی پولیس اسٹیشن پہنچ گیا اور وہاں جاکر اپنے ہی والد کے خلاف بچے سے غیر قانونی اور جبری مشقت لینے کی شکایت کردی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں