0

ہمارے پیٹ کا دماغ ہماری سوچ سے بھی زیادہ ذہین ہے، تحقیق


کوینزلینڈ: آسٹریلوی ماہرین نے جدید ترین تکنیکوں سے چوہوں کے معدوں میں اندرونی حصوں کا جائزہ لینے کے بعد دریافت کیا ہے کہ پیٹ میں موجود اعصابی خلیات کا مجموعہ ہماری سابقہ سوچ سے زیادہ ذہین ہے۔واضح رہے کہ جس طرح کے اعصابی خلیات ہمارے دماغ میں پائے جاتے ہیں، اس سے ملتے جلتے اعصابی خلیے ہمارے پیٹ میں بھی ہوتے ہیں جو غذا کے ہضم ہونے سے متعلق کئی کاموں میں خصوصی اہمیت رکھتے ہیں۔یہ خلیے ہمارے معدے کی دیواروں کے سکڑنے اور پھیلنے سے لے کر کھانا ہضم ہونے تک، درجنوں کاموں کی نہ صرف نگرانی کرتے ہیں بلکہ ضرورت پڑنے پر پیٹ/ معدے کے پٹھوں کو حکم بھی جاری کرتے رہتے ہیں۔سی صلاحیت کی بنا پر پیٹ میں اعصابی خلیوں کے اس مجموعے کو پیٹ کا دماغ بھی کہا جاتا ہے۔یہ تحقیق چوہوں پر اس لیے کی گئی کیونکہ چوہوں کی بعض اقسام اندرونی طور پر انسانوں سے بہت ملتی جلتی ہیں جبکہ وہاں ہونے والے عوامل بھی انسانوں سے مشابہت رکھتے ہیں۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں