0

چار دواں والے ایک کیپسول سے بلڈ پریشر کا بہتر علاج


سڈنی: آسٹریلوی طبی ماہرین نے تقریبا چار سال تک جاری رہنے والی ایک تحقیق سے دریافت کیا ہے کہ ہائی بلڈ پریشر کے مریضوں کو زیادہ مقدار میں ایک دوا کے بجائے چار دواں کی تھوڑی تھوڑی مقدار ایک ساتھ دی جائے تو انہیں زیادہ فائدہ پہنچتا ہے۔نیو ساتھ ویلز کی یونیورسٹی آف سڈنی میں یہ طبی آزمائشیں ہائی بلڈ پریشر کے 591 مریضوں پر ساڑھے تین سال تک جاری رہیں جبکہ ان میں شریک رضاکاروں کی عمر 18 سال سے زیادہ تھی۔تحقیق کی غرض سے بلڈ پریشر کی چار مختلف دواں (اربیسارٹن، ایملوڈیپائن، انڈاپامائیڈ اور بائیسوپرولول) کی بہت کم مقدار (الٹرا لو ڈوز) کیپسول میں ایک ساتھ بند کی گئی۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں